Tuesday , May 22 2018
Home / Top Stories / اسرائیلی فضائی حملوں میں حماس کے دو عسکریت پسند ہلاک ، درجنوں زخمی

اسرائیلی فضائی حملوں میں حماس کے دو عسکریت پسند ہلاک ، درجنوں زخمی

بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت بنانے ٹرمپ کے اعلان پر سارے فلسطین میں احتجاج ، صیہونی فورسیس سے برہم مظاہرین کی جھڑپیں

غزہ ۔ /9 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) بیت المقدس کو اسرائیل کاد ارالحکومت بنانے امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے اعلان کے بعد تمام فلسطینی علاقوں میں پیدا شدہ غم و غصہ کی لہر میں مزید اضافہ ہوگیا ہے ۔اس دوران غزہ پٹی پر اسرائیل کے جوابی فضائی حملوں میں فلسطینی تنظیم حماس کے دو عسکریت پسند ہلاک ہوگئے ۔ ٹرمپ کی جانب سے اس انتہائی متنازعہ فیصلے کے اعلان کے بعد فلسطین میں شروع ہونے والے احتجاج میں تاحال چار افراد ہلاک اور دیگر درجنوں مظاہرین زخمی ہوچکے ہیں ۔ اس دوران ٹرمپ کے فیصلے کی دنیا بھر میں مذمت کی جارہی ہے ۔ ٹرمپ کو اقوام متحدہ کے اکثر رکن ممالک کی تنقیدوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ علاوہ ازیں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے گزشتہ روز طلب کردہ اپنے ہنگامی اجلاس میں بھی امریکی صدر کے فیصلہ کو ناقابل قبول قرار دیا تھا ۔ مقبوضہ مغربی کنارہ میں فلسطینی احتجاجیوں کی آج بھی اسرائیلی سکیوریٹی فورسیس سے جھڑپ ہوگئی ۔ فلسطینی مظاہرین نے صیہونی فورسیس کو شدید سنگباری کا نشانہ بنایا اور انہوں نے (فورسیس) نے آنسو گیاس کے شیل برسانے کے علاوہ ایربلٹس اور مہلک کارتوسوں سے فائرنگ کے ساتھ ان حملوں کا جواب دیا ۔ فلسطینیوں نے گزشتہ روز سرحدی علاقہ میں اسرائیلی فورسیس سے تصادم کے دوران مہلوک شخص کے جلوس جنازہ کے دوران اسرائیلی فورسیس کو اپنے غم وغضہ کا نشانہ بنایا۔ حماس کے لیڈر اسمعیل ہنیہ نے فلسطینی انتفاضہ کی ایک نئی تحریک شروع کرنے کی دھمکی دی ہے ۔جس سے اس علاقہ میں جاری تشدد میں ہولناک اضافہ کے اندیشے پیدا ہوگئے ہیں اور تجزیہ نگار آئندہ کی صورتحال دیکھنے کا بے چینی کے ساتھ انتظار کررہے ہیں ۔ بیت المقدس ، غزہ پٹی اور مغربی کنارہ میں گزشتہ روز نماز جمعہ کے بعد جھڑپوں کا آغاز ہوگیا تھا اور اسرائیلی فورسیس کی فائرنگ میں درجنوں فلسطینی زخمی ہوگئے تھے ۔
وسطی غزہ پٹی کے علاقہ نصیرت میں حماس کے فوجی شعبہ کے ٹھکانہ پر اسرائیل نے آج طلوع سے قبل فضائی حملہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT