Wednesday , January 17 2018
Home / دنیا / اسرائیل ، فلسطینیوں کی 15 ایکڑ اراضی کا مقدمہ ہار گیا

اسرائیل ، فلسطینیوں کی 15 ایکڑ اراضی کا مقدمہ ہار گیا

سلفیت۔ 23 اکٹوبر۔(سیاست ڈاٹ کام) فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقہ سلفیت میں مقامی فلسطینی شہری15 ایکڑ رقبے کے ایک پلاٹ کی ملکیت کا مقدمہ جیتنے میں کامیاب ہوگئے ہیں اور اسرائیلی عدالت عوفرنے اسرائیلی فوج کے زمین خالی کرنے کے نوٹس باطل قرار دیتے ہوئے فلسطینیوں کو اپنی اراضی استعمال کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ خیال رہے کہ اسرائیلی فوج

سلفیت۔ 23 اکٹوبر۔(سیاست ڈاٹ کام) فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقہ سلفیت میں مقامی فلسطینی شہری15 ایکڑ رقبے کے ایک پلاٹ کی ملکیت کا مقدمہ جیتنے میں کامیاب ہوگئے ہیں اور اسرائیلی عدالت عوفرنے اسرائیلی فوج کے زمین خالی کرنے کے نوٹس باطل قرار دیتے ہوئے فلسطینیوں کو اپنی اراضی استعمال کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ خیال رہے کہ اسرائیلی فوج نے سلفیت کے مغرب میں برقین قصبے میں پندرہ ایکڑ رقبہ یہودی کالونی اور دیوار فاصل کیلئے خالی کرانے کے احکامات صادر کررکھے تھے۔ مقامی فلسطینی آبادی نے اپنے وکلاء کی مدد سے صیہونی فوج کے نوٹسیں اسرائیل کی عدالت میں چیلنج کردیئے تھے۔ عدالت نے کل چہارشنبہ 22 اکتوبر کو اپنے فیصلے میں فلسطینیوں کا موقف درست قرار دیتے ہوئے صیہونی انتظامیہ کو مذکورہ فلسطینی اراضی پر قبضے سے روک دیا۔سلفیت گورنری کے انتظامی شعبے کی جانب سے’’مرکز اطلاعات فلسطین‘‘ کو بتایا گیا کہ مقامی فلسطینی انتظامیہ اور دیوار فاصل کے خلاف سرگرم کمیٹی کے تعاون سے اسرائیلی فوج کا جاری کردہ حکم نامہ نمبر 194 اسرائیلی عدالت میں چیلنج کیا تھا۔ اسرائیلی حکام کی جانب سے جاری حکم نامہ میں کہا گیا تھا کہ یہ اراضی اسرائیل کی ملکیت ہے اور وہ اسے دیوار فاصل اور یہودی کالونیوں کی تعمیر کیلئے استعمال کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT