Thursday , December 14 2017
Home / دنیا / اسرائیل کا روس پر طیاروں کو نشانہ بنانے کا الزام، ماسکو کی تردید

اسرائیل کا روس پر طیاروں کو نشانہ بنانے کا الزام، ماسکو کی تردید

بیت المقدس، ماسکو۔ 23 اپریل ۔(سیاست ڈاٹ کام) شام میں موجود روسی فوج کے جنگی طیاروں کے معاملے پر ماسکو اور اسرائیل کے درمیان کشیدگی ایک بارپھر سامنے آئی ہے۔ اطلاعات کے مطابق اسرائیل نے الزام عاید کیا ہے کہ شام میں روسی جنگی طیاروں کی جانب سے اسرائیلی طیاروں کو فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا ہے تاہم روس کی جانب سے باضابطہ طور پر اسرائیلی الزامات کی سختی سے تردید کی گئی ہے جن میں کہا گیا تھا کہ جمعرات کے روز اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہونے اپنے دورہ روس کے دوران صدر ولادی میر پوتن سے ملاقات میں شام میں اپنے طیاروں کو فائرنگ کا نشانہ بنائے جانے کا معاملہ بھی اٹھایا تھا۔کریملن کے ترجمان دیمتری بیسکوف نے صحافیوں کو بتایا کہ اسرائیلی ذرائع ابلاغ میں آنے والی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو اور صدر پوتن کے درمیان ہونے والی ملاقات میں ایسی کوئی بات نہیں کی گئی۔اسرائیل کے کثیرالاشاعت عبرانی اخبار ’’یدیعوت احرونوت‘‘ نے اپنی رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ شام میں روسی طیاروں سے دو مرتبہ اسرائیلی طیاروں پر فائرنگ کی گئی تھی۔ فائرنگ کا یہ واقعہ وزیراعظم نیتن یاہو نے روسی صدر کے سامنے بھی اٹھایا تاکہ فوجی کارروائیوں کے حوالے سے ہم آہنگی پیدا کی جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT