Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / اسرائیل کے جبر کو ختم کرنے جدوجہد ضروری

اسرائیل کے جبر کو ختم کرنے جدوجہد ضروری

جناب سید وقار الدین اور عرب سفراء کا بارکس میں والہانہ استقبال
حیدرآباد ۔ 17 ۔ دسمبر : ( راست ) : قبائل یمن کے ذمہ دار احباب کی جانب سے منعقد کی گئی تقریب میں شریک احباب سے خطاب کرتے ہوئے جناب سید وقار الدین چیرمین انڈو عرب لیگ نے کہا کہ غاصب اسرائیل کے ظلم جبر کے خلاف تمام ہندوستانیوں کو ایک پلیٹ فارم پر آنا بے حد ضروری ہے ۔ مسجد اقصیٰ میں آئے دن نہتے فلسطینی مسلمانوں کو شہید کیا جارہا ہے ۔ ان کے گھروں کو مسمار کرتے ہوئے ان پر یہودیوں کی کالونیاں بنائی جارہی ہیں ۔ مظالم روزانہ بڑھتے جارہے ہیں ۔ اسرائیل کو اقوام متحدہ کے قرار دادوں کی کوئی پرواہ نہیں ۔ امن کی بات کرنے والے ممالک آنکھ بند کیے ہوئے ہیں ۔ مہاتما گاندھی ، پنڈت نہرو نے زندگی بھر فلسطین کے حق میں آواز اٹھاتے رہے ۔ آزادی سے قبل ہندوستان میں یہودیوں کی آبادی ایک لاکھ چار ہزار تھی ہندوستان میں مسلمانوں کی آبادی 20 کروڑ سے زائد ہے ۔ چار ہزار یہودی اس ملک میں اتنا اثر رکھتے ہیں کہ آج ہندوستان کے ساتھ اس کے تعلقات اتنے گہرے ہیں کہ ہمارا ملک اسرائیل سے دفاعی معاہدے اور تجارتی معاہدے کرنے میں سب سے آگے ہیں ۔ 20 کروڑ سے زائد مسلمانوں کے انتشار اور آپسی اختلافات کی وجہ سے اس ملک میں ان کی کوئی بات سنی نہیں جاتی ۔ انڈو عرب لیگ 1967 سے مسجد اقصیٰ بیت المقدس پر اسرائیل کے غاصبانہ قبضے کے خلاف فلسطینی مسلمانوں کے حق میں جدوجہد مصروف ہے ۔ اس سلسلے میں ہم نے ہمارے بھائیوں کی مدد کے لیے ملک بھر میں بیداری کی مہم چلا رہے ہیں ۔ آج بھی ہمارے ملک کے مسلمان مسجد اقصیٰ کے تحفظ اور مظلوم فلسطینی بھائیوں کے لیے متحد ہوگئے تو ہماری حکومت بھی ہمارے اتحاد کی طاقت کے آگے گھٹنے ٹیک دے گی ۔ 4 ہزار یہودی متحد ہو کر اسرائیل کا سفارتخانہ اس ملک میں کھلواسکتے ہیں تو کیا 20 کروڑ مسلمانوں کا اتحاد اس حکومت کو اسرائیل سے سفارتی تعلقات ختم کرنے پر مجبور کرسکتا ہے ۔ جناب عثمان بن محمد الہاجری نے انڈو عرب لیگ کی کارکردگی سے واقف کرواتے ہوئے کہا کہ فلسطین کے حق میں اگر کوئی تنظیم ملک میں حقیقی طور پر خدمات انجام دے رہی ہے تو وہ انڈو عرب لیگ ہے جس کی ایک مثال غزہ کے مظلوم عوام کے لیے اپنی جانب سے 25 لاکھ روپئے امداد روانہ کی ہے ۔ سفیر فلسطین ہزاکسلینسی جناب عدنان ابوالھیجہ نے اہل بارکس سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ دنیا کے تمام امن پسند لوگ آج فلسطین کے حق میں آواز بلند کررہے ہیں اور اس سلسلے میں ہندوستان اور فلسطین کے رشتے بھی کافی مضبوط ہیں ۔ سفیر سوڈان ہزاکسلینسی ڈاکٹر حسن الطالب سفیر اردن ، ہزاکسلینسی جناب حسن محمود محمد الجواریے ، جمال عبداللہ الحاج یمن کے سفیر کا خصوصی طور پر یمنی قبائل کے ذمہ داروں نے پرجوش استقبال کرتے ہوئے تمام مہمانوں کی گلپوشی کی ۔ جناب علی بن عبدالرحمن باحاذق اور جناب حبیب محسن نے دعوت کا اہتمام کیے ۔ انڈو عرب لیگ کے ذمہ داروں میں جناب ڈاکٹر اکبر علی خاں وائس چیرمین ، جناب ابوبکر باجابر سکریٹری کے علاوہ جناب مقبول احمد ، جناب جمیل احمد خان نمائندہ خصوصی رہنمائے دکن بھی شامل تھے ۔ تقریب میں شامل عرب قبائل کے تمام بزرگ حضرات اور نوجوانوں نے چیرمین انڈو عرب لیگ جناب سید وقار الدین کو یقین دلایا کہ آئندہ انڈو عرب لیگ کو جو بھی پروگرام ہوں گے ان میں تمام لوگ بھر پور حصہ لیں گے ۔ ان میں قابل ذکر جناب شیخ طیب باجابر ، جناب حسین باعوم ، جناب عارف بن حید ، جناب حمزہ بن عمر الجابری بن عطیف ( ظفر بھائی ) ، جناب حبیب سید احمد بن جمیلیل ، جناب احمد بن محفوظ ، جناب عبداللہ باجابر ، جناب سید پاشاہ بغدادی ، جناب عاصم بن سعید باسلامہ ، جناب فیصل باعوم ، جناب عبدالرحمن بلشیرم ، جناب محمود باجابر ، جناب حسن بغدادی ، جناب سعود بن سعید باعوم ، جناب محمد بارزیق کے علاوہ دیگر احباب موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT