Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی پہلی برانچ گجرات میں قائم ہوگی

اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی پہلی برانچ گجرات میں قائم ہوگی

مسلمانوں کی تعلیمی و معاشی ترقی میں حصہ داری ، ظفر سریش والا کی کامیاب مساعی ، وائبرنٹ گجرات سمٹ میں ریکارڈ تعداد میں خلیجی مندوبین کی شرکت
حیدرآباد۔13 جنوری (سیاست نیوز) اسلامک ڈیولپمنٹ بینک جدہ نے ہندوستان میں اپنی تعلیمی اور فلاحی سرگرمیوں کو وسعت دینے کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت بینک کی ہندوستان میں پہلی شاخ گجرات میں قائم کی جارہی ہے۔ مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے چانسلر ظفر سریش والا جو احمد آباد میں جاری وائبرینٹ گجرات سمٹ میں حکومت کی جانب سے خلیجی ممالک کے مندوبین کی میزبانی کررہے ہیں، سیاست نیوز کو بتایا کہ ہندوستان کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اسلامک ڈیولپمنٹ بینک نے کسی غیر رکن ملک میں اپنی شاخ قائم کرنے سے اتفاق کرلیا ہے۔ عام طور پر اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی سرگرمیاں صرف رکن ممالک میں جاری رہتی ہیں تاہم ظفر سریش والا کی مساعی پر ہندوستان کے 25 کروڑ مسلمانوں کی خدمت کے جذبے نے اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کو گجرات میں اپنی شاخ قائم کرنے پر راضی کرلیا ہے۔ گزشتہ ایک سال سے ظفر سریش والا اس سلسلہ میں مساعی کررہے تھے اور انہوں نے حال ہی میں جدہ میں اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کے صدرنشین سے ملاقات کی تھی۔ وائبرنٹ گجرات سمٹ میں سعودی عرب کے سفیر برائے ہند سعود الساطی نے اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی ہندوستان میں پہلی برانچ کے قیام کا اعلان کیا۔ وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کے دورۂ سعودی عرب کے بعد سعودی سرمایہ کاروں نے ہندوستان کی سمت اپنی دلچسپی کا اظہار کیا جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ وائبرنٹ گجرات سمٹ میں سعودی عرب سے 97 مندوبین نے شرکت کی جن کا تعلق سرکاری اور خانگی شعبہ کے اہم اداروں سے ہے۔ 2003ء سے وائبرنٹ گجرات سمٹ کا اہتمام کیا جارہا ہے تاہم یہ پہلا موقع ہے جب سعودی عرب سے اس قدر بڑی تعداد میں مندوبین نے شرکت کی۔ اس کے علاوہ دیگر اسلامک اور عرب ممالک سے 240 مندوبین سمٹ میں شریک ہوئے۔ ظفر سریش والا جو وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کے قریبی مانے جاتے ہیں، اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی ہندوستان میں سرگرمیوں کے آغاز کو مسلمانوں کی تعلیمی ترقی سے مربوط کرنے کی کوشش کی ہے۔ انہوں نے بینک سے خواہش کی کہ وہ نہ صرف گجرات بلکہ ملک کے دیگر حصوں میں مسلمانوں کی تعلیمی ترقی میں ا پنا حصہ ادا کریں۔ انہوں نے بتایا کہ آرگنائزیشن آف اسلامک کوآپریشن (او آئی سی) کے 57 مسلم ممالک ارکان ہیں اور اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی شاخیں انہی ممالک میں قائم کی گئی ہیں۔ ظفر سریش والا نے جب بینک کے ذمہ داروں کو ہندوستان میں 25 کروڑ مسلم آبادی اور ان کی صورتحال سے واقف کروایا تو گجرات میں برانچ کے قیام سے سرگرمیوں کے آغاز کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ظفر سریش والا پہلے ہندوستانی ہیں جنہوں نے اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کے صدرنشین سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں ہندوستان میں سرگرمیوں کے آغاز کے لیے راضی کیا۔ انہوں نے بتایا کہ سمٹ میں شریک آئی ڈی بی اور دیگر سعودی اداروں نے ہندوستانی بینکوں اور کمپنیوں کے ساتھ کئی معاہدات کیئے ہیں اور وہ کئی اہم شعبہ جات میں سرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ اسلامک بینک جدہ نے سابق میں بھی یو پی اے دورِ حکومت میں ہندوستان میں سرگرمیوں کے آغاز میں دلچسپی ظاہر کی تھی لیکن اس وقت کی حکومتوں نے کوئی خاص توجہ نہیں دی۔ وزیراعظم نریندر مودی نے خلیجی ممالک سے تعلقات بہتر بناتے ہوئے عرب سرمایہ کاروں کو ہندوستان کی طرف متوجہ کیا ہے۔ ظفر سریش والا نے بتایا کہ اپریل 2016ء میں وزیراعظم کے دورہ کے موقع پر ہندوستانی ایگزن بینک نے آئی ڈی بی سے 100 ملین ڈالر کی ایکسپورٹ گیارنٹی کا معاہدہ کیا تھا جس سے ہندوستانی ایکسپورٹر بینک کے ممبر ممالک سے بآسانی تجارت کر پائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ وائبرنٹ گجرات سمٹ میں اسلامک بینک نے راشٹریہ انسٹی ٹیوٹ آف اسکل اینڈ ایجوکیشن سے 55 ملین ڈالر کے معاہدے پر دستخط کئے ہیں جس سے گجرات کو فائدہ ہوگا۔ ظفر سریش والا کے مطابق سعودی سفیر نے تیقن دیا کہ آئی ڈی بی کی جانب سے گجرات کو 30 میڈیکل ویانس سربراہ کی جائیں گی تاکہ طبی شعبہ میں خدمات کو بہتر بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ آئی ڈی بی شرعی اصولوں پر رکن ممالک میں مسلمانوں کی اختصابی اور سماجی ترقی کے لیے کام کرتا ہے۔ ہندوستانی اداروں سے معاہدات کے موقع پر موجود ظفر سریش والا نے کہا کہ بینک گجرات کے بعد ملک کے دیگر علاقوں میں اپنی سرگرمیوں کو وسعت دینے کے حق میں ہے۔ حکومت گجرات کی خواہش پر ظفر سریش والا نے تمام خلیجی مندوبین کی میزبانی کی۔ انہوں نے اسلامک ڈیولپمنٹ بینک سے خواہش کی کہ وہ دیگر ممالک میں مسلمانوں کے حق میں جاری سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ ہندوستان میں مسلمانوں کی تعلیمی ترقی کے لیے کام کریں۔ تعلیمی اداروں کے قیام اور ان کی عمارتوں کی تعمیر میں تعاون کی خواہش کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ایسے تعلیمی ادارے جہاں پروفیشنل شعبہ جات کی کمی ہے، اس کے لیے اسلامک ڈیولپمنٹ بینک اپنا تعاون دراز کرے گا۔ ظفر سریش والا کے مطابق اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی ہندوستان میں سرگرمیوں کے آغاز سے نہ صرف مسلمانوں بلکہ دیگر کمزور طبقات کی مدد ہوگی۔ حکومت ہند اور ریزرو بینک آف انڈیا ہندوستان میں بلا سودی بینکنگ نظام کو متعارف کرنے کے اقدامات کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکز میں سابق برسر اقتدار پارٹیاں اگر اسی طرح دلچسپی لیتیں تو آج ملک کے کئی علاقوں میں اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی سرگرمیاں شروع ہوچکی ہوتیں۔ انہوں نے کہا کہ بینک کے ذمہ دار ان سے ربط میں ہیں اور وہ اس بات کی کوشش کریں گے کہ غریب مسلمانوں کی حالت سدھارنے اور ملک کی ترقی میں اسلامک ڈیولپمنٹ بینک اہم رول ادا کرے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT