Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / اسمبلی سکریٹریز کا نئے طرز پر تقرر،چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے پاس تجویز زیر غور

اسمبلی سکریٹریز کا نئے طرز پر تقرر،چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے پاس تجویز زیر غور

حیدرآباد ۔ 28 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : حکومت تلنگانہ پارلیمنٹری سکریٹری عہدوں کو ہائی کورٹ کی جانب سے کالعدم کرنے کے بعد اب نئے طرز پر اسمبلی سکریٹریوں کا تقرر کرنے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے ۔ اس تجویز سے متعلق فائل چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے ہاں زیر غور ہے ۔ باوثوق سرکاری ذرائع کے مطابق محکمہ جات جنرل اڈمنسٹریشن ، محکمہ قانون و انصاف ، محکمہ امور مقننہ کے غور کرنے کے بعد اس کی منظوری دینے کے فوری بعد ان عہدوں کا باقاعدہ سرکاری طور پر اعلان کئے جانے کی امید پائی جاتی ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ ریاستی حکومت کی جانب سے سابق میں کئے گئے پارلیمنٹری سکریٹریز کے تقرر کو قانون کے مغائر قرار دیتے ہوئے ہائی کورٹ نے ان عہدوں کو کالعدم کردیا تھا ۔ رکن پارلیمنٹ کانگریس پارٹی مسٹر جی سکھیندر ریڈی اور رکن اسمبلی مسٹر اے ریونت ریڈی کی جانب سے پارلیمنٹری سکریٹریز تقرر کئے جانے کے خلاف ہائی کورٹ سے رجوع ہو کر مقدمہ دائر کیا گیا تھا اور اس درخواست پر مباحث جوابی مباحث مکمل ہونے کے بعد گذشتہ دنوں کے دوران ہی ہائی کورٹ ڈیویژن بنچ نے اپنا فیصلہ دیا تھا ۔ اس فیصلہ کی روشنی میں پارلیمنٹری سکریٹریز عہدوں پر فائز ارکان اسمبلی وی ستیش کمار ، جی کشور کمار ، سرینواس گوڑ ، کے لکشمی ، جے وینکٹ راؤ اور ڈی ونئے بھاسکر کو اپنے عہدوں سے مستعفی ہونا پڑا تھا ۔ لہذا اب حکومت برطرف کردہ تلنگانہ پارلیمنٹری سکریٹریز کو کسی نہ کسی عہدے پر فائز کرنے کے مقصد سے اسمبلی سکریٹریز کی حیثیت سے نامزد کرنے کے لیے کوشاں دکھائی دے رہی ہے اور بتایا جاتا ہے کہ مذکورہ چھ پارلیمنٹری سکریٹریوں کو بہر صورت کسی نہ کسی طرح کابینی وزیر رتبہ کے حامل عہدے پر فائز کرنے کے لیے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ارادہ ظاہر کیا ہے ۔ لہذا اسمبلی سکریٹریز عہدے پر فائز کرنے کی صورت میں کوئی قانونی پیچیدگیاں پیدا نہ ہونے کا مکمل طور پر اشارہ ملنے کے ساتھ ہی احکامات جاری کئے جانے کی قوی توقع پائی جاتی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT