Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / اسمبلی میں چیف منسٹر کے خطاب پر اپوزیشن کی ہنگامہ آرائی

اسمبلی میں چیف منسٹر کے خطاب پر اپوزیشن کی ہنگامہ آرائی

حیدرآباد 23 جنوری (سیاست نیوز ) تلنگانہ بل پر آندھرا پردیش اسمبلی میں جاری گرما گرم مباحث کے دوران آج چیف منسٹر مسٹر این کرن کمار ریڈی کے خطاب کا آغاز ہوا لیکن ان کی جانب سے پیش کئے جانے والے اعداد و شمار پر نہ صرف اپوزیشن جماعتوں کے ارکان اسمبلی نے ہنگامہ آرائی شروع کردی بلکہ کرن کمار ریڈی کابینہ کے وزیر مسٹر پنالہ لکشمیا بھی برہمی ک

حیدرآباد 23 جنوری (سیاست نیوز ) تلنگانہ بل پر آندھرا پردیش اسمبلی میں جاری گرما گرم مباحث کے دوران آج چیف منسٹر مسٹر این کرن کمار ریڈی کے خطاب کا آغاز ہوا لیکن ان کی جانب سے پیش کئے جانے والے اعداد و شمار پر نہ صرف اپوزیشن جماعتوں کے ارکان اسمبلی نے ہنگامہ آرائی شروع کردی بلکہ کرن کمار ریڈی کابینہ کے وزیر مسٹر پنالہ لکشمیا بھی برہمی کے عالم میں ایوان سے جانے لگے تھے لیکن بعض ارکان نے انہیں سمجھا کہ روک لیا۔ مسٹر کرن کمار ریڈی کی تقریر کے دوران جب وہ علحدہ ریاست کی تشکیل کے نقصانات بتانے کیلئے مختلف رپورٹس پیش کررہے تھے اس دوران مسٹر پنالہ لکشمیا نے ایک سے زائد مرتبہ اسپیکر سے درخواست کی کہ انہیں بات کرنے کا موقع دیا جائے لیکن ان کی درخواستوں کو بار بار نظر انداز کئے جانے پر وہ برہمی کے عالم میں ایوان چھوڑ کر جانے لگے جنہیں جانے سے دیگر ارکان اسمبلی نے روک لیا۔ آبپاشی ، موسم باراں کے پانی، زراعت کیلئے درکار پانی کے علاوہ برقی پیداوار کے مسئلہ پر چیف منسٹر مسٹر این کرن کمار ریڈی نے تلنگانہ مباحث میں حصہ لیتے ہوئے ان کی تفصیلات پیش کرنے کی کوشش کی۔ چیف منسٹر کی تقریر کے دوران سب سے پہلے ڈاکٹر جناردھن ریڈی رکن اسمبلی بھارتیہ جنتا پارٹی نے مداخلت کی اور ان اعداد و شمار کی اصلاح کا موقع دیئے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے اسپیکر سے وقت طلب کیا اسپیکر کی جانب سے اجازت نہ دیئے جانے پر بھارتیہ جنتا پارٹی کے ارکان اسمبلی نے احتجاج شروع کردیا ۔

اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے تلنگانہ راشٹرا سمیتی ارکان اسمبلی بھی چیف منسٹر کے تقریر میں مداخلت کیلئے پوڈیم کے قریب پہنچ گئے اور انہیں وقت دیئے جانے کا مطالبہ کرنے لگے ۔ بی جے پی اور ٹی آر ایس کی اس ہنگامہ آرائی اور تقریبا ہر سیاسی جماعت کی جانب سے ارکان اسمبلی جو چیف منسٹر کی تقریر پر رد عمل ظاہر کرنے وقت طلب کررہے تھے ان کے اصرار کو دیکھتے ہوئے اسپیکر اسمبلی مسٹر این منوہر نے ایوان کی کارروائی کو 10 منٹ تک کیلئے ملتوی کردیا اور زائد از ایک گھنٹے بعد ایوان کی کارروائی دوبارہ بحال ہوئی ۔ چیف منسٹر مسٹر این کرن کمار ریڈی نے ان کی تقریر کے دوران رکاٹ پیدا کرنے کی کوشش کرنے والوں کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ انہوں نے اس دوران اسپیکر کو اس بات سے مطلع کیا کہ تلنگانہ بل پر مباحث کے وقت میں اضافہ ہوچکا ہے اور اب بہت وقت ہے ۔

TOPPOPULARRECENT