Thursday , September 20 2018
Home / کھیل کی خبریں / اسمتھ کی تیسری سنچری، آسٹریلیا فائنل میں داخل

اسمتھ کی تیسری سنچری، آسٹریلیا فائنل میں داخل

ہوبارٹ ۔ 23 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) نوجوان کپتان اسٹیو اسمتھ کی تیسری ونڈے سنچری کی بدولت آسٹریلیا نے یہاں ہوبارٹ میں انگلینڈ کے خلاف منعقدہ سہ رخی سیریز کے ایک مقابلے میں 3 وکٹوں سے کامیابی حاصل کرتے ہوئے فائنل میں رسائی حاصل کرلی ہے۔ پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے انگلش ٹیم نے اپنے اوپنر این بیل کی سنچری کی بدولت مقررہ 50 اوورس میں 8 وکٹوں کے نقص

ہوبارٹ ۔ 23 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) نوجوان کپتان اسٹیو اسمتھ کی تیسری ونڈے سنچری کی بدولت آسٹریلیا نے یہاں ہوبارٹ میں انگلینڈ کے خلاف منعقدہ سہ رخی سیریز کے ایک مقابلے میں 3 وکٹوں سے کامیابی حاصل کرتے ہوئے فائنل میں رسائی حاصل کرلی ہے۔ پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے انگلش ٹیم نے اپنے اوپنر این بیل کی سنچری کی بدولت مقررہ 50 اوورس میں 8 وکٹوں کے نقصان پر 303 رنز اسکور کئے جبکہ جوابی اننگز میں آسٹریلیا نے اسمتھ کی ناقابل تسخیر سنچری کی بدولت ایک گیند قبل مطلوبہ نشانہ 304/7 کی شکل میں حاصل کرلیا حالانکہ اننگز کے آخری 3 اوورس میں آسٹریلیا کو کامیابی کیلئے صرف 9 رنز درکار تھے لیکن مہمان بولروں نے متاثرکن بولنگ کرتے ہوئے مقابلوں میں سنسنی پیدا کردی تھی۔ مین آف دی میچ اسمتھ نے 95 گیندوں میں 6 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 102 رنز کی ناٹ آوٹ اننگز کھیلی۔ ایک موقع پر آسٹریلیائی ٹیم 26.4 اوورس میں 161/4 کی نازک صورتحال میں مبتلاء

ہوئی تھی۔ اس موقع پر براڈ ہاڈین نے 29 گیندوں میں 4 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے تیز رفتار 42 رنز اسکور کرنے کے علاوہ کپتان اسمتھ کے ہمراہ چھٹی وکٹ کیلئے فی اوور 7.96 کی اوسط سے 81 رنز کی پارٹنر شپ میں کلیدی رول ادا کیا۔ دیگر کھلاڑیوں میں آرون فنچ (32)، شان مارش (45)، گلین میاکس ویل (37) اور ججس فالکنر (35) نے قابل ذکر اسکور بنایا۔ انگلینڈ کیلئے معین علی 50، اسٹیون فن 65 اور کریس ووکس نے 58 رنز کے عوض فی کس دو کھلاڑیوں کو آوٹ کیا۔ قبل ازیں این بیل نے 125 گیندوں میں 15 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 141 رنز اسکور کرنے کے علاوہ معین علی کے ہمراہ پہلی وکٹ کیلئے 113 رنز کی پارٹنر شپ نبھائی۔ معین علی نے ایک اوور میں 3 چھکے مارنے کے علاوہ 48 گیندوں میں 46 رنز بنا کربھی ایک بہتر شروعات کو بڑی اننگز میں تبدیل نہ کرسکے۔ انگلینڈ نے بہتر شروعات حاصل کرنے کے بعد اننگز کے آخری اوورس میں وکٹوں کے یکے بعد دیگر زوال کی وجہ سے متوقع اسکور سے تقریباً 30 رنز کم اسکور کئے۔

TOPPOPULARRECENT