Tuesday , January 23 2018
Home / شہر کی خبریں / اسٹیٹ مسلم کونسل کا انتخابات میں سیکولر جماعتوں کی تائید کا فیصلہ

اسٹیٹ مسلم کونسل کا انتخابات میں سیکولر جماعتوں کی تائید کا فیصلہ

سیکولر ووٹوں کی تقسیم کو روکنے شعور بیداری مہم چلانے کا اعلان ، سرکردہ شخصیتوں کی شرکت

سیکولر ووٹوں کی تقسیم کو روکنے شعور بیداری مہم چلانے کا اعلان ، سرکردہ شخصیتوں کی شرکت

حیدرآباد۔/17اپریل، ( سیاست نیوز) اسٹیٹ مسلم کونسل نے مجوزہ انتخابات میں سیکولر جماعتوں کی تائید کا فیصلہ کیا۔کونسل نے حیدرآباد میں منعقدہ اجلاس میں فرقہ پرست طاقتوں کو اقتدار میں آنے سے روکنے کیلئے سیکولر ووٹ کی تقسیم کو روکنے عوام میں شعور بیداری مہم چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ کونسل کے صدر جناب حامد محمد خاں کی صدارت میں اجلاس منعقد ہوا جس میں حیدرآباد کے علاوہ عادل آباد، بھینسہ، نرمل، آرمور، نظام آباد، بودھن، ورنگل، ہنمکنڈہ، محبوب نگر، نارائن پیٹ، مکتھل، کھمم، نلگنڈہ اور دیگر علاقوں کے 200 سے زائد مندوبین نے شرکت کی۔ جناب اقبال احمد انجینئر، جناب طارق قادری جنرل سکریٹری صوفی اکیڈیمی، مفتی خلیل احمد ندوی صدر نشین صمدانی گروپ آف انسٹی ٹیوشنس، جناب حامد حسین شطاری، مفتی عبدالغنی رشادی، مولانا تنظیم عالم قاسمی، مفتی ضمیر احمد مظاہری اور دوسری مختلف تنظیموں کے قائدین نے شرکت کرتے ہوئے موجودہ انتخابی صورتحال کے پس منظر میں سیکولر ووٹوں کی تقسیم کو روکنے کی ضرورت پر زور دیا۔جناب حامد محمد خاں نے بتایا کہ صورتحال کا بغور جائزہ لینے کے بعد تمام سیکولر اور طاقتور امیدواروں کی تائید کا فیصلہ کیا گیا۔ کامیابی کے امکانات کے اعتبار سے سیکولر پارٹیوں کی تائید کی جائے گی۔ ٹی آر ایس اور کانگریس کے علاوہ کھمم میں لوک سبھا کے امیدوار سی پی آئی کے ریاستی سکریٹری ڈاکٹر کے نارائنا کی تائید کا فیصلہ کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ تائید کے ذریعہ ریاستی مسلم کونسل اس موقف میں ہوگی کہ انتخابات کے بعد سیاسی جماعتوں کے وعدوں پر عمل آوری کیلئے ان پر اثرانداز ہوسکے۔کونسل کسی بھی صورت میں تلگودیشم، بی جے پی اور وائی ایس آر کانگریس کی تائید نہیں کرے گی۔ سنگاریڈی اسمبلی حلقہ سے کانگریس کے امیدوار جگاریڈی کی تائید نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ حیدرآباد لوک سبھا حلقہ اور سات اسمبلی حلقوں پر مجلس کی تائید کا فیصلہ کیا گیا تاہم یہ تائید مشروط ہوگی اور اس پارٹی کے صدر کے روبرو منشور مطالبات پیش کیا جائے گا۔ حیدرآباد کے دیگر اسمبلی اور پارلیمانی حلقوں میں سیکولر پارٹیوں کے مضبوط امیدواروں کی تائید کا فیصلہ کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ شہر میں عوام کے بنیادی مسائل کی یکسوئی پر مشتمل منشور مطالبات پیش کیا جائے گا۔ حامد محمد خاں نے کہا کہ نظام آباد ( اربن ) اسمبلی حلقہ سے مجاز علی کی تائید کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ اس کے جواب میں مقامی مسلم جماعت لوک سبھا حلقہ نظام آباد کے ویلفیر پارٹی آف انڈیا کے امیدوار ملک معتصم خاں کی تائید کرے۔

TOPPOPULARRECENT