Wednesday , January 17 2018
Home / کھیل کی خبریں / اسپاٹ فکسنگ کیلئے راجستھان رائلز کے کھلاڑی سے رابطہ

اسپاٹ فکسنگ کیلئے راجستھان رائلز کے کھلاڑی سے رابطہ

نئی دہلی ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آئی پی ایل میں رشوت ستانی کی لعنت نے پھر ایک مرتبہ اپنا بدنما سر اٹھا لیا جب راجستھان رائلز کے ایک کھلاڑی نے انکشاف کیا کہ اسپاٹ فکسنگ کے لئے گذشتہ ماہ کسی نے رابطہ کیا تھا۔ اس انکشاف سے یہ واضح ہوگیا کہ تنازعہ سے دوچار ٹوئنٹی 20 ایونٹ میں اسپاٹ فکسنگ کی کوششیں ہنوز جاری ہیں۔ بی سی سی آئی کے سکریٹری ان

نئی دہلی ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آئی پی ایل میں رشوت ستانی کی لعنت نے پھر ایک مرتبہ اپنا بدنما سر اٹھا لیا جب راجستھان رائلز کے ایک کھلاڑی نے انکشاف کیا کہ اسپاٹ فکسنگ کے لئے گذشتہ ماہ کسی نے رابطہ کیا تھا۔ اس انکشاف سے یہ واضح ہوگیا کہ تنازعہ سے دوچار ٹوئنٹی 20 ایونٹ میں اسپاٹ فکسنگ کی کوششیں ہنوز جاری ہیں۔ بی سی سی آئی کے سکریٹری انوراگ ٹھاکر نے توثیق کی کہ بلاشبہ ایک کھلاڑی اسپاٹ فکسنگ کیلئے رجوع ہوا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس کھلاڑی کے اقدام سے ظاہر ہوگیا

ہیکہ اسپاٹ فکسنگ کے خلاف کھلاڑیوں کی ذہن سازشی کی کوشش بارآور ثابت ہوئی ہیں۔ انوراگ ٹھاکر نے ٹوئیٹر پر لکھا کہ ’’ایک کھلاڑی سے کوئی رجوع ہوا تھا اور اس (کھلاڑی) نے بی سی سی آئی کے انسداد رشوت ستانی یونٹ کو فی الفور مطلع کردیا‘‘۔ ان کے ٹوئیٹر پر مزید کہا گیا ہیکہ ’’کھلاڑی چوکس ہیں اور جانتے ہیں کہ کیا کرنا ہے۔ ہماری مسلسل مساعی کے نتیجہ میں یہ شعور بیدار ہوا ہے‘‘۔ ٹھاکر نے اگرچہ ممبئی سے تعلق رکھنے والے اس کھلاڑی کی شناخت کا انکشاف نہیں کیا لیکن راجستھان رائلز میں ممبئی سے تعلق رکھنے والے پانچ کھلاڑیوں میں اجنکیا راہنے، پراوین تانبے، دنیش سالونکھے، دھاول کلکرنی اور ابھیشیک نائر شامل ہیں۔

واضح رہے کہ 2013ء کے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کا مرکز و محور بھی راجستھان رائلز ٹیم ہی رہی تھی۔ چنانچہ اس ٹیم نے تازہ ترین واقعہ کی توثیق کرتے ہوئے خاطیوں کے خلاف کوئی مروت نہ کرنے کا وعدہ کیا ہے۔ راجستھان رائلز کے سی ای او رگھوائیر نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ’’ایک ماہ قبل ایک شخص (جو آئی پی ایل سے کسی بھی طرح وابستہ نہیں ہے) راجستھان رائلز کے ایک کھلاڑی سے انڈین پریمیئر لیگ 2015ء کے بارے میں غیرمناسب انداز میں رجوع ہوا تھا، جس کی اطلاع کے ساتھ ہی اس ٹیم نے آئی پی ایل قواعد ملحوظ رکھتے ہوئے بی سی سی آئی کے انسداد رشوت ستانی و سیکوریٹی یونٹ کو اس واقعہ سے باخبر کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ’’راجستھان رائلز نے اس واقعہ کی فوری اطلاع دینے پر اپنے کھلاڑی کی دیانتدار اور صاف گوئی کی ستائش کی ہے‘‘۔ ایئر نے کہا کہ راجستھان رائلز نے جس کے چند کھلاڑی 2013ء کے اسکینڈل کے ضمن میں گرفتار بھی کئے گئے تھے، کسی بھی رشوت ستانی کی صورت میں سخت ترین کارروائی کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT