Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / اسپین حملہ بزدلانہ کارروائی : سکریٹری جنرل اقوام متحدہ

اسپین حملہ بزدلانہ کارروائی : سکریٹری جنرل اقوام متحدہ

دہشت گردی کے خلاف جنرل پرشنگ جیسی سخت کارروائی ضروری : ٹرمپ کا ردعمل
اقوام متحدہ / واشنگٹن ۔ 18 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : اسپین کے شہر بارسلونا میں کل ہوئے دہشت گردانہ حملوں کی مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ نے اسے بزدلانہ کارروائی سے تعبیر کیا ۔ سکریٹری جنرل انٹونیو گوٹیرس اور سلامتی کونسل نے حملہ کے ذمہ داروں اور اس پر عمل آوری کرنے مالیہ فراہم کرنے والوں کیخلاف فوری کارروائی کرتے ہوئے انہیں کیفرکردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ۔ گوٹیرس نے کہا کہ اس اندوہناک موقع پر ہماری تمام تر ہمدردیاں حکومت اسپین اور عوام کیساتھ ہیں ۔ ہم ان سے اظہار یگانگت کرتے ہیں ۔ اس وقت دنیا کے تقریبا ہر ملک کو دہشت گردی کا سامنا ہے اور اسپین کی اس لڑائی میں ہم بھی برابر کے شریک ہیں ۔ انہوں نے مہلوکین کے ارکان خاندان اور دوستوں کیساتھ اظہار تعزیت کیا ۔ اقوام متحدہ کے جنرل سکریٹری کے نائب ترجمان فرحان حق نے یہ بات کہی اور بتایا کہ مسٹر گوٹیرس اس بات کے خواہاں ہیں کہ حملہ کے ذمہ داروں کو فوری گرفتار کر کے سخت سے سخت سزائیں دی جائیں ۔ یاد رہیکہ بارسلونا کے مشہور راس رامبلاس علاقہ میں ایک ویان ڈرائیور نے راہگیروں کی بھیڑ پر ویان چڑھا دی تھی جس میں 13 افراد ہلاک ہوچکے ہیں ۔ سلامتی کونسل نے بھی انتہائی سخت الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے اسے ایک ’ بہیمانہ اور بزدلانہ ‘ حرکت سے تعبیر کیا ۔ کونسل کے ارکان نے دہشت گردی کو عالمی امن و سلامتی کیلئے شدید خطرہ بتایا ۔ دوسری طرف امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بھی اس حملہ کی مذمت کرتے ہوئے اسپین کو ہر ممکنہ تعاون فراہم کرنے کا وعدہ کیا ۔ کل اپنے ٹوئیٹ میں انہوں نے کہا کہ دہشت گردانہ حملوں کے بعد امریکہ اسپین کی ہر ممکنہ مدد کرنے تیار ہے ۔ ضرورت اس بات کی ہیکہ آپ ثابت قدم رہیں اور سخت کارروائی کیلئے پس و پیش نہ کریں ۔ ہم آپ سے محبت کرتے ہیں ۔ انہوں نے اس موقع پر ایک دیگر ٹوئیٹ میں ایک قدیم امریکی جنرل پرشنگ کا حوالہ دیا اور کہا کہ جس طرح دہشت گردوں کیخلاف سخت کارروائی انہوں نے کی تھی اسکے بعد 35 سالوں تک اسلامی دہشت گردی نے پھر کبھی اپنا سر نہیں اٹھایا ۔ لہٰذا آج ہمیں جنرل پرشنگ کے نقش قدم پر چلنے کی ضرورت ہے ۔ امریکی نائب صدر نے بھی اسپین میں ہوئے حملہ کو ایک المناک دن سے تعبیر کیا اور کہا کہ دہشت گردوں کو اب چوکس ہوجانا چاہئے کیونکہ ان کیخلاف اب سخت ترین کارروائیاں کی جانے والی ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT