Saturday , November 25 2017
Home / دنیا / اسپین کی دستوری عدالت سے صوبہ قطلان کے استصواب عامہ کا قانون معطل

اسپین کی دستوری عدالت سے صوبہ قطلان کے استصواب عامہ کا قانون معطل

میڈرڈ، 8 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) اسپین کی آئینی عدالت نے شمال مشرقی صوبہ قطلان کی پارلیمنٹ میں بدھ کو منظور کے گئے قانون کو معطل کردیا ہے جس میں وہاں یکم اکتوبر کو ایک استصواب عامہ کے منصوبے کو منظوری دی گئی تھی ۔ عدالتی ذرائع نے بتایا کہ آئینی عدالت کے حکم التواء سے صوبہ قطلان کے استصواب عامہ کے ذریعہ اسپین سے آزادی کا راستہ مسدود ہوگیا ہے ۔ عدالتی حکم کے بعد یہ ریفرنڈم کا قانون ملتوی کردیا جائے گا۔ عدالت میں ججوں ان دلائل پر غور کیا کہ ریفرنڈم پر ووٹنگ ملک کے آئین کی خلاف ورزی ہے ۔ وزیراعظم ماریانوراجوئے نے جمعرات کو کہا تھا کہ انہوں نے عدالت سے اپیل کی ہے کہ وہ ریفرنڈم کی تجویز کو غیر قانونی قرار دے ۔ ہسپانوی آئین کے مطابق پورا ملک ایک آئین کے تحت ہے اور ملک ناقابل تقسیم ہے ۔

TOPPOPULARRECENT