Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / اسکالرشپس و فیس باز ادائیگی اسکیم

اسکالرشپس و فیس باز ادائیگی اسکیم

جوابی حلف نامہ کے عدم ادخال پر عدالت کی حکومت پر برہمی

جوابی حلف نامہ کے عدم ادخال پر عدالت کی حکومت پر برہمی
حیدرآباد 9 فبروری (سیاست نیوز) ہائی کورٹ حیدرآباد نے طلباء کی اسکالر شپ اور فیس باز ادائیگی سے متعلق فاسٹ اسکیم کے سلسلہ میں حکومت کی جانب سے جوابی حلف نامہ داخل نہ کئے جانے پر برہمی کا اظہار کیا ۔ چیف جسٹس کلیان جیوتی سین گپتا اور جسٹس پی وی سنجیو کمار پر مشتمل ڈیویژن بنچ پر آج فاسٹ اسکیم سے متعلق مقدمہ کی سماعت مقرر تھی۔ تلنگانہ حکومت کی جانب سے اسکیم کے بارے میں جوابی حلف نامہ داخل نہیں کیا گیا۔ عدالت نے سرکاری وکیل سے حلف نامہ کے عدم ادخال کے بارے میں استفسار کیا ۔ سرکاری وکیل نے کہا کہ حکومت فاسٹ اسکیم پر نظر ثانی کررہی ہے لہذا حلف نامہ کے ادخال کیلئے وقت دیا جائے۔ سرکاری وکیل نے عدالت سے کہا کہ اسکیم کے بارے میں حکومت کے نظر ثانی شدہ فیصلہ کے ساتھ تفصیلی جواب داخل کیا جائے گا۔ ڈیویژن بنچ نے حکومت کے استدلال کو قبول کرتے ہوئے سماعت کو آئندہ 15 دنوں تک کیلئے ملتوی کردی۔ واضح رہے کہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد حکومت نے فیس باز ادائیگی اسکیم کو ختم کرتے ہوئے نئی اسکیم فاسٹ کا اعلان کیا تھا۔ اس اسکیم کے خلاف عدالت میں درخواست داخل کی گئی ۔ گذشتہ سماعت کے موقع پر عدالت نے کہا تھا کہ ملک کی کسی بھی حصہ میں اس طرح کی اسکیم نہیں جس طرح کی تلنگانہ حکومت نے اعلان کی ہے ۔ واضح رہے کہ حالیہ کابینی اجلاس میں تلنگانہ حکومت نے فاسٹ اسکیم سے دستبرداری کا فیصلہ کیا تاہم عدالت نے حلف نامہ داخل نہیں کیا گیا ۔ حکومت کے فیصلہ کی تفصیلات کے ساتھ جواب داخل کرنے عدالت نے سرکاری وکیل کو ہدایت دیتے ہوئے سماعت کو آئندہ 15 دنوں کیلئے ملتوی کردیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT