Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / اسکالر شپ کے ذریعہ طالب علم کی حوصلہ افزائی اور اعلیٰ تعلیم میں نمایاں مقام کی ترغیب

اسکالر شپ کے ذریعہ طالب علم کی حوصلہ افزائی اور اعلیٰ تعلیم میں نمایاں مقام کی ترغیب

انڈوبرٹش اسکالر شپ کی تقسیم ، ڈاکٹر فصیح الدین علی خاں ، جناب زاہد علی خاں کا خطاب
حیدرآباد ۔ 18 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : اچھے نشانات حاصل کر کے امتیازی کامیابی حاصل کرنے والے طلباء وطالبات کی حوصلہ افزائی کے لیے انڈو برٹش مسلم ایجوکیشن فاونڈیشن ( یو کے ) لندن کے زیر اہتمام گذشتہ 16 برسوں سے ہر سال پابندی کے ساتھ اسکالر شپ دی جارہی ہے ۔ اس کے لیے ڈاکٹر فصیح الدین علی خاں قابل مبارکباد ہیں ۔ اسکالر شپس کے ذریعہ جہاں طالب علم کی ہمت افزائی کی جاتی ہے وہیں انہیں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے راہیں ہموار ہوتی ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار جناب زاہد علی خاں ایڈیٹر سیاست نے دفتر سیاست کے محبوب حسین جگر ہال میں کیا اور ایس ایس سی اور انٹر میڈیٹ کے امتحانات میں اعلیٰ نشانات حاصل کرنے والے طلباء میں اسکالر شپ اور اسناد تقسیم کئے ۔ اور طلبہ کو مشورہ دیا کہ وہ ایس ایس سی کے بعد کیرئیر کی منصوبہ بندی کریں ۔ عام طور پر انٹر میڈیٹ کے بعد طلبہ کیرئیر گائیڈنس کے ذریعہ ڈاکٹر ، انجینئر بننے کا منصوبہ رکھتے ہیں جب کہ کئی دیگر شعبہ جات میں شاندار کیرئیر کے مواقع ہیں طلبہ کو چاہئے کہ وہ میڈیا ، مینجمنٹ ، لا اور دیگر پیشوں کی طرف طلبہ توجہ دیں ۔ مسلم آبادی میں اضافہ ہورہا ہے اور مسلمانوں کی آبادی مستقبل میں دنیا میں سب سے زیادہ ہوجائے گی لیکن تعلیم کے بغیر ترقی ممکن نہیں ہے ۔ مسلمانوں کو تعلیم سے آراستہ ہونے کا مشورہ دیا ۔ یہودی صرف ایک فیصد ہیں لیکن تعلیم یافتہ ہونے کی وجہ سے دنیا میں ان کا مقام ہے ۔ حیدرآباد کی مسلم شادیوں میں بے جا اخراجات کے حوالے سے مسلم خواتین پر زور دیا کہ وہ شادی میں اسراف سے گریز کرنے کے لیے آگے آئیں ۔ آج لڑکیاں اچھا پڑھ رہی ہیں لیکن لڑکے نہیں پڑھ رہے ہیں ۔ ماں باپ کا لڑکیوں پر کنٹرول ہے لیکن لڑکوں کو بھی تعلیم کی طرف توجہ دلوانے کی ضرورت ہے ۔ ٹرپل آئی ٹی میں ادارہ سیاست نے دو مسلم لڑکیوں کے داخلے کے لیے پانچ لاکھ کی خطیر رقم بہ طور فیس دے کر حوصلہ افزائی کی ہے ۔ اب اسکالر شپ حاصل کرنے والے طلبہ بھی اپنا نشانہ آئی آئی ٹی کی طرف بڑھیں ۔ ڈاکٹر فصیح الدین علی خاں بانی صدر انڈو برٹش ایجوکیشن فاونڈیشن (لندن ) یو کے نے کہا کہ وہ صرف ایک ہزار طالب علموں کو اسکالر شپ کی رقم دینے کا نشانہ رکھا جو  کہ ناممکن نظر آرہا تھا لیکن آج 16 برس بعد انہوں نے جملہ 1500 طلبہ کو اسکالر شپ کی رقم دی جو ہر طالب علم کو دو ہزار اور ڈھائی ہزار روپئے کی ہے لیکن اس کو چھوٹی رقم نہ سمجھیں بلکہ اس سے حوصلہ بڑھائیں ۔ سرپرستوں نے جن کے لڑکے اور لڑکیاں یہ اسکالر شپ حاصل کئے انہیں بھی مبارکباد دیتے ہوئے تھامسن الوا ریڈسین کی ماں کا واقعہ سنایا جس کی نصیحت نے اس کو دنیا کا صف اول کا سائنسداں بنادیا ۔ طالب علموں کو تعلیم کے ساتھ کردار سازی پر بھی زور دیا گیا ۔ جناب میر شجاعت علی جنرل منیجر سیاست نے پروگرام کے انعقاد میں مکمل معاونت کی ۔ اس موقع پر طلباء ، اولیائے طلبہ اور سرپرستوں کے علاوہ جناب سید ابوالفتح حسینی ایڈوکیٹ ، احمد صدیقی مکیش اور دیگر حضرات شریک تھے ۔ کیرئیر کونسلر سیاست ایم اے حمید نے نظامت کے فرائض انجام دئیے ۔ قرات سے پروگرام کا آغاز ہوا ۔ شکریہ پر اختتام ہوا ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT