Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / اسکل ڈیولپمنٹ پروگرامس کیلئے ریلویز سے اشتراک

اسکل ڈیولپمنٹ پروگرامس کیلئے ریلویز سے اشتراک

حکومت ریلوے اسٹیشنس کا انتخاب کررہی ہے، مملکتی وزیر اسکل ڈیولپمنٹ راجیو پرتاب روڈی کا بیان
حیدرآباد 16 اگسٹ (پی ٹی آئی) حکومت چند ریلوے اسٹیشن کے انتخاب کے عمل میں ہے تاکہ ان کی فیسلیٹز پر اسکل ڈیولپمنٹ پروگرامس منعقد کئے جائیں۔ مملکتی وزیر اسکل ڈیولپمنٹ (آزادانہ چارج) راجیو پرتاب روڈی نے کہاکہ اس کے لئے ریلویز سے اشتراک بڑی اہمیت رکھتا ہے اس لئے ہم نے ریلویز کے ساتھ ایک بڑا اشتراک کیا ہے۔ انھوں نے یہاں پی ٹی آئی کو بتایا کہ ہم چند ریلوے اسٹیشنس کا انتخاب کررہے ہیں، یہ عمل جاری ہے اور اسکل ڈیولپمنٹ پروگرام شروع ہوتے جارہا ہے۔ چند ماہ میں ہم چند ایک اسٹیشنس کو اس طرح کام کرتا دیکھیں گے انڈین ریلویز اور اسکل ڈیولپمنٹ اینڈ انٹرپرینئرشپ وزارت نے ملک بھر میں اسکل ڈیولپمنٹ پروگرامس منعقد کرنے کے لئے ایک یادداشت مفاہمت پر دستخط کئے ہیں۔ یہ نظریہ ورچول ٹریننگ جیسے کلاس رومس، انھیں دنیا سے مربوط کرنے کے لئے سافٹ اسکلس یا انفراسٹرکچر استعمال کے لئے ان ریلوے اسٹیشنس کی کپاسٹی کو وہاں دستیاب خالی جگہ سے استفادہ کرتے ہوئے استعمال کرنا ہے۔ راجیو پرتاپ روڈی نے کہاکہ ریلوے کے پاس بہت بڑی کنسٹرکشن کپاسٹی ہے۔ انڈین ریلویز کے ساتھ شراکت داری کے بارے میں انھوں نے کہاکہ ریلویز میں ملک میں سب سے بڑا انفراسٹرکچر ہے بشمول تقریباً 6000 ریلوے اسٹیشنس 43,000 کلو میٹر آپٹیکل فائبرنیٹ ریلویزمیں تقریباً 6 ہزار ریلوے اسٹیشنس ہیں ان میں سے 5000 ریلوے اسٹیشنس ایسے ہیں جہاں ایک یا کم ٹرینیں رکھتی ہیں اس لئے ملک میں ہر ریلوے اسٹیشنس پر تین چیزوں کا ہونا ضروری ہے ایک انفراسٹرکچر ہو یعنی ایک شیڈ یا ایک بلڈنگ پانی اور سنیٹیشنس کی سہولت کے ساتھ دو بہتر الیکٹرسٹی نیٹ ورک اور تیسرے جو کسی دوسرے مقام پر نہیں ہے۔ آپٹیکل فائبرنیٹ ورک ہے جو 43000 کیلو میٹر ہے۔ انھوں نے کہاکہ ریلوے انفراسٹرکچر ناقابل رسائی دیہی علاقہ میں بھی جہاں ملک کی قابل لحاظ آبادی رہتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT