Wednesday , November 22 2017
Home / ہندوستان / اسکولس اب آؤ، کھاؤ ، جاؤ کا مرکزبن گئے ہیں

اسکولس اب آؤ، کھاؤ ، جاؤ کا مرکزبن گئے ہیں

مڈ ڈے میل کی وجہ سے صرف کھانے کیلئے طلباء کا اندراج : جاویڈکر
نئی دہلی۔/6اپریل، ( سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی وزیر فروغ انسانی وسائل پرکاش جاویڈکر نے کہا کہ ملک میں کئی اسکولس اب صرف مڈ ڈے میل اسکولس بن گئے ہیں اور یہاں داخلہ لینے والے طلباء نہ  تو ناکام ہوتے ہیں نہ ہی ایک خاص جماعت میں ہی اٹکے رہتے ہیں بلکہ یہ اسکولس آؤ، کھاؤ، جاؤ کا مقام بن گئے ہیں۔ حق تعلیم قانون کی منظوری کے بعد یہ اسکولس صرف آؤ، کھاؤ اور جاؤ کا مرکز ثابت ہورہے ہیں۔ راجیہ سبھا میں وقفہ صفر کے دوران ارکان کے پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے جاویڈکر نے کہا کہ ایک بل ایسا ہے جس میں طلباء کو اجازت دی جائے گی کہ اگر وہ ایک سطح پر پہنچ کر بھی کچھ سیکھنے میں ناکام ہوں تو انھیں ساتویں جماعت اورآٹھویں جماعت میں ہی رکھا جائے گا۔ اور ریاستی حکومتوں نے اس پالیسی میں تبدیلی لانے کا مطالبہ کیا ہے۔ یہ ایک سنگین مسئلہ ہے کہ چھٹویں جماعت کا طالب علم دوسری جماعت کے لئے تیار کردہ سبق پڑھنے سے قاصر ہے یا ساتویں جماعت کا طالب علم تیسری جماعت کے لئے تیار کردہ ریاضی کے سوال کو حل نہیں کرسکتا۔ کئی سوالات کا جواب دیتے ہوئے معیار تعلیم کے بارے میں جاویڈکر نے کہا کہ گذشتہ 3سال میں 47 نئے کیندریا ودیالیہ کو شروع کیا گیا ہے۔
اور مزید50 ایسے اسکولس کے قیام کی منظوری دی گئی ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT