Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / اضلاع کو حیدرآباد سے مربوط کرنے والی سڑکوں کی کشادگی

اضلاع کو حیدرآباد سے مربوط کرنے والی سڑکوں کی کشادگی

حیدرآباد /7 نومبر ( این ایس ایس ) تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندرا شیکھر راؤ نے آج عہدیداروں کو ہدایت کی کہ محکمہ جات پنچایت راج اور عمارات و شوارع سے متعلق تمام تعمراتی کام آئندہ سال ماہ مئی تک مکمل کرلئے جائیں ۔ سڑکوں کی تعمیر کی عاجلانہ تکمیل کا جائزہ لینے کیلئے آج منعقدہ اعلی سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر چندر شیکھر راؤ نے

حیدرآباد /7 نومبر ( این ایس ایس ) تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندرا شیکھر راؤ نے آج عہدیداروں کو ہدایت کی کہ محکمہ جات پنچایت راج اور عمارات و شوارع سے متعلق تمام تعمراتی کام آئندہ سال ماہ مئی تک مکمل کرلئے جائیں ۔ سڑکوں کی تعمیر کی عاجلانہ تکمیل کا جائزہ لینے کیلئے آج منعقدہ اعلی سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر چندر شیکھر راؤ نے عہدیداروں سے کہا کہ رواں مہینے کے اختتام تک ضابطوں کی تکمیل کے بعد ڈسمبر کے پہلے ہفتہ سے سڑکوں کی تعمیر کے کام میں تیزی پیدا کی جائے اور جلد سے جلد تکمیل عمل میں لائی جائے ۔ انہوں نے محکمہ پنچایت راج سے 700 کروڑ روپئے کے بقایاجات کی اجرائی کیلئے عہدیداروں کو ہدایت کی اور کہا کہ نئے بجٹ میں بھی فنڈس مختص کئے جارہے ہیں اور سڑکوں کیلئے خصوصی فنڈس مختص کئے گئے ہیں ۔ ہر ضلع سے حیدرآباد کو مربوط کرنے والی شاہراہوں کو ’ 4 لین ‘ بنایا جائے جبکہ ہر منڈل سے ضلع مستقروں کو ’2 لین ‘ بنایا جائے ۔ ان سڑکوں کو بچھانے کے کام میں اعلی معیار برقرار رکھا جائے نئے سڑکوں کی تعمیر کے علاوہ موجودہ سڑکوں کی تعمیر ، مرمت و توسیع کی جائے ۔ محکمہ پنچایت راج کے تخمینوں کے مطابق ہر حلقے میں 385 کیلومیٹر کے حساب سے مجموعی طور پر 38,500 نئی سڑکیں تعمیر کئے جائیں گی۔ جن میں 14,500 کیلومیٹر سڑکیں خستہ حال ہیں ۔ جن کی تعمیر و مرمت ضروری ہے ۔ سرکاری تخمینہ کے مطابق محکمہ عمارت و شوارع کے تحت سڑکوں کی تعمیر پر 24,000 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT