Wednesday , September 26 2018
Home / شہر کی خبریں / اضلاع کے عازمین کی حج کیمپ آمد کے لیے مفت ٹرانسپورٹ کی سہولت

اضلاع کے عازمین کی حج کیمپ آمد کے لیے مفت ٹرانسپورٹ کی سہولت

ٹرانسپورٹ کا خرچ ادا کرنے چیرمین تلنگانہ حج کمیٹی مسیح اللہ خاں کا عزم
حیدرآباد۔ 8 فبروری (سیاست نیوز) صدرنشین تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی محمد مسیح اللہ خان نے حج 2018ء کے عازمین حج کو اضلاع سے حج کیمپ پہنچنے کے لیے اپنے خرچ پر ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ مسیح اللہ خان جنہوں نے حال ہی میں حج کمیٹی کے صدرنشین کی ذمہ داری سنبھالی ہے، کہا کہ وہ عازمین حج کی خدمت کے جذبے کے تحت یہ پیشکش کررہے ہیں۔ ٹرانسپورٹیشن کے اخراجات وہ اپنے ذاتی خرچ سے ادا کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ عازمین حج کی روانگی کے موقع پر جو حج کیمپ منعقد کیا جاتا ہے، اس کے لیے تمام 31 اضلاع سے پہنچنے والے عازمین کی وہ خدمت کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اگر کم تعداد میں عازمین ہوں تو ان کے لیے کار کا انتظام کیا جائے گا اور اگر زائد تعداد ہو تو خصوصی بس کا اہتمام رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ عازمین حج کے لیے بہتر سہولتوں کے ساتھ ٹرانسپورٹ کا انتظام رہے گا تاکہ وہ کسی دشواری کے بغیر سفر کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ صرف عازمین کے حد تک کے اخراجات وہ ادا کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اضلاع میں موجود حج سوسائٹیوں میں اختلافات ہیں اور وہ عازمین کے انتظامات کے سلسلہ میں مختلف دعوے کررہی ہیں۔ لہٰذا انہوں نے ٹرانسپورٹیشن کا انتظام اپنے ذمہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی ایک سوسائٹی کو ذمہ داری دی جائے گی کہ وہ عازمین کو روانہ کریں۔ انہوں نے بتایا کہ عازمین حج کی خدمت حج کے برابر ثواب کے حصول کا ذریعہ ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو بھی عازمین حج کی بہتر خدمات کے لیے بارہا توجہ دلاچکے ہیں۔ انہوں نے حج کمیٹی کے بجٹ میں اضافہ کیا ہے۔ مسیح اللہ خان نے کہا کہ تلنگانہ کا حج کیمپ بہتر سہولتوں کے اعتبار سے ملک بھر میں سرفہرست ہے۔ انہوں نے کہا کہ جاریہ سال بھی تلنگانہ حج کمیٹی کا کیمپ مثالی رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ حج کیمپ اور حج ٹرمینل دونوں مقامات پر گزشتہ سال سے بہتر انتظامات رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ آندھراپردیش کے عازمین حج کے لیے بھی بہتر سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔ مسیح اللہ خان اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے عازمین حج کے کیمپس میں شرکت کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ حیدرآباد میں حج تربیتی کیمپس کا بہت جلد آغاز ہوگا۔ اس سلسلہ میں وہ ایگزیکٹیو آفیسر پروفیسر ایس اے شکور سے مشاورت کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT