Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / اضلاع کے عوام بھی راشن شاپس بند کئے جانے کے مخالف

اضلاع کے عوام بھی راشن شاپس بند کئے جانے کے مخالف

حکومت کے ایک خفیہ سروے میں انکشاف۔ قطعی فیصلہ کا اختیار چیف منسٹر کو سونپ دیا گیا
حیدرآباد ۔ 24 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : شہر حیدرآباد کے غریب عوام راشن شاپس کو بند کرنے کے مخالف ہیں ۔ اضلاع سے بھی یہی اشارے مل رہے ہیں ۔ حکومت کی جانب سے کرائے گئے سروے میں اس بات کا انکشاف ہوا ہے جس کے بعد قطعی فیصلہ کرنے کا اختیار چیف منسٹر پر چھوڑ دیا گیا ہے ۔ چند دن قبل چیف منسٹر کے سی آر نے پرگتی بھون میں محکمہ سیول سپلائز کا خصوصی اجلاس طلب کرکے راشن شاپس کی بدعنوانیوں اور بے قاعدگیوں کو روکنے راشن شاپس کو بند کر کے متبادل کے طور پر 6500 کروڑ روپئے راشن کارڈ ہولڈرس کے اکاونٹ میں رقم جمع کرانے کا جائزہ لینے کی عہدیداروں کو ہدایت دی تھی ۔ انتخابات سے سال دیڑھ سال قبل اس اہم فیصلے پر کئی ماہرین اور عہدیداروں نے مخالفانہ رائے پیش کی ہے ۔ جس کے بعد چیف منسٹر نے حیدرآباد کے بشمول ریاست کے مختلف اضلاع میں عوامی نبض کا پتہ چلانے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں خفیہ طور پر سروے کا بھی آغاز کرایا گیا ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ حیدرآباد کے زیادہ تر راشن کارڈ ہولڈرس راشن شاپس سے چاول حاصل کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں کیونکہ انہیں راشن شاپس سے ایک روپیہ کیلو چاول حاصل ہورہا ہے ۔ اضلاع میں بھی عوام راشن شاپس بند کرنے کے مخالف ہیں ۔ واضح رہے کہ چاول کی قیمتوں میں زبردست اضافہ ہورہا ہے جو غریب عوام پر بہت بڑا مالی بوجھ ہے ۔ راشن شاپس سے ایک روپیہ چاول کی تقسیم انہیں راحت فراہم کررہی ہے ۔ راشن شاپس کی برقراری کیلئے عوامی تائید کو دیکھتے ہوئے حکومت عجلت میں کسی فیصلہ سے گریز کررہی ہے ۔ ریاست میں جملہ 85,0650 راشن کارڈس ہیں ۔ ہر ماہ 2.75 کروڑ عوام انتودیا ۔ انایوجنا کے تحت مزید 15 ہزار افراد استفادہ اٹھا رہے ہیں ۔ راشن کارڈس کے ذریعہ ہر فرد کو 6 کیلو چاول فراہم کیا جارہا ہے ۔ انتودیا کارڈ ہولڈرس کو ہر ماہ 35 کیلو چاول مفت دیا جارہا ہے ۔ ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ غریب عوام کی اکثریت راشن شاپس کو برخاست کرنے کے خلاف ہے ۔

TOPPOPULARRECENT