Saturday , June 23 2018
Home / ہندوستان / اعظم ترین رائے دہی یقینی بنانے مرکز اور الیکشن کمیشن کو نوٹس

اعظم ترین رائے دہی یقینی بنانے مرکز اور الیکشن کمیشن کو نوٹس

نئی دہلی۔ 25 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج ایک درخواست مفادِ عامہ پر جس میں خواہش کی گئی تھی کہ انہیں ایسے رہنمایانہ خطوط کا تعین کرنے کی ہدایت دی جائے جس سے زیادہ سے زیادہ شہری انتخابات میں اپنے حق رائے دہی سے استفادہ کریں، مرکز اور الیکشن کمیشن کو نوٹسیں جاری کیں۔ جسٹس ایچ ایل دتو اور ایس اے بوبڑے نے الیکشن کمیشن اور مرکز کو

نئی دہلی۔ 25 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج ایک درخواست مفادِ عامہ پر جس میں خواہش کی گئی تھی کہ انہیں ایسے رہنمایانہ خطوط کا تعین کرنے کی ہدایت دی جائے جس سے زیادہ سے زیادہ شہری انتخابات میں اپنے حق رائے دہی سے استفادہ کریں، مرکز اور الیکشن کمیشن کو نوٹسیں جاری کیں۔ جسٹس ایچ ایل دتو اور ایس اے بوبڑے نے الیکشن کمیشن اور مرکز کو نوٹسیں جاری کرتے ہوئے خواہش کی کہ شہریوں کی اعظم ترین تعداد کی رائے دہی کو یقینی بنانے اقدامات کئے جائیں۔ یہ درخواست ستیہ پرکاش نے پیش کی تھی۔ ان کا کہنا ہے کہ لازمی رائے دہی کا تصور ارجنٹینا، آسٹریلیا، بلجیم اور برازیل جیسے ممالک میں کامیاب ہوچکا ہے۔ اسے ہندوستان میں بھی نافذ کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دستور کے تحت شہریوں کو مختلف بنیادی حقوق حاصل ہیں، لیکن اپنے حق رائے دہی کا استفادہ کرنے کی ذمہ داری ان پر عائد نہیں کی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT