افضل گرو کو دی گئی پھانسی غیر منصفانہ تھی: فاروق عبداللہ

نئی دہلی 18 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) راجیو گاندھی قتل کیس کے 3 مجرمین کی سزائے موت کو سپریم کورٹ کی جانب سے عمر قید میں تبدیل کئے جانے کے بعد مرکزی وزیر فاروق عبداللہ نے آج کہاکہ پارلیمنٹ پر حملہ کے مجرم افضل گرو کو دی گئی پھانسی قطعاً ناواجبی اور غیرمنصفانہ تھی۔ نیشنل کانفرنس کے لیڈر ڈاکٹر عبداللہ نے کہاکہ افضل گرو کو پھانسی پر چڑھانے

نئی دہلی 18 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) راجیو گاندھی قتل کیس کے 3 مجرمین کی سزائے موت کو سپریم کورٹ کی جانب سے عمر قید میں تبدیل کئے جانے کے بعد مرکزی وزیر فاروق عبداللہ نے آج کہاکہ پارلیمنٹ پر حملہ کے مجرم افضل گرو کو دی گئی پھانسی قطعاً ناواجبی اور غیرمنصفانہ تھی۔ نیشنل کانفرنس کے لیڈر ڈاکٹر عبداللہ نے کہاکہ افضل گرو کو پھانسی پر چڑھانے کے فیصلہ سے قبل مرکزی حکومت نے اُن کی پارٹی سے مشاورت نہیں کی تھی۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے پارلیمنٹ کے باہر اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ’’اُنھوں (حکومت) نے کبھی بھی ہم سے کچھ نہیں کہا

اور کچھ نہیں پوچھا، بس اُنھوں نے (افضل گرو کو) پھانسی پر چڑھادیا جو انتہائی ناواجبی اور غیرمنصفانہ تھا۔ راجیو گاندھی قتل کیس کے تین مجرمین کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کرنے سپریم کورٹ کے فیصلہ کا خیرمقدم کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہاکہ ’’سرکاری تاخیر کو یا جو کچھ بھی وجہ ہو آپ پھانسی پر چڑھاتے ہی کیوں ہیں، سزائے موت کا استعمال نہیں کیا جانا چاہئے اور عمر قید ایک بہتر سزا ہے‘‘۔ ساری مہذب دنیا میں آج ایسا ہی کیا جارہا ہے۔ میرے خیال میں مہذب دنیا میں جو روایت ہے ہندوستان میں بھی اُس پر عمل کیا جانا چاہئے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT