Tuesday , December 11 2018

افغانستان میں صدارتی انتخابات مؤخر ہوسکتے ہیں ؟

کابل ۔ 26 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) افغانستان میں آئندہ سال اپریل میں منعقد شدنی صدارتی انتخابات کا اپنے مقررہ وقت پر منعقد ہونا ممکن نظر نہیں آرہا ہے کیونکہ حالیہ مقننہ انتخابات کے بعد ووٹوں کی گنتی کو لیکر اور رائے دہی میں پائی جانے والی متعدد خامیوں کی شکایتیں ملنے پر حکام ہنوز پس و پیش میں مبتلاء ہیں۔ یہ بتایا جارہا ہیکہ انتخابات کو مزید تین ماہ تک آگے بڑھا دیا جائے گا۔ یاد رہیکہ امریکہ بھی ایڑی چوٹی کا زور لگا رہا ہے کہ طالبان کو کسی نہ کسی طرح امن بات چیت کی میز پر لایا جائے تاکہ ملک میں 17 سال سے جاری جنگ کا ہمیشہ کیلئے خاتمہ ہوجائے تاہم بعض گوشوں سے یہ بھی کہا جارہا ہیکہ اگر آئندہ سال اپریل میں صدارتی انتخابات کروائے گئے تو طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانا ایک بار پھر لیت و لعل میں پڑ جائے گا۔ دوسری جانب یہ بھی کہا جارہا ہیکہ صدارتی انتخابات کانٹے کے مقابلے پر مبنی ہوں گے۔ دریں اثناء انڈپنڈنٹ الیکشن کمیشن (IEC) اور الیکٹورل کمپلنٹس کمیشن (ECC) نے اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ صدارتی انتخابات 13 جولائی تک مؤخر بھی کئے جاسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT