Thursday , June 21 2018
Home / پاکستان / افغانستان میں پاکستان ۔ ہندوستان بالواسطہ جنگ کا اندیشہ : مشرف

افغانستان میں پاکستان ۔ ہندوستان بالواسطہ جنگ کا اندیشہ : مشرف

کراچی۔ 18 نومبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق صدر پاکستان ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف نے کہا ہے کہ نیٹوافواج کی واپسی سے شورش زدہ افغانستان میں پاکستان اور ہندوستان بالواسطہ جنگ میں ملوث ہوسکتے ہیں۔ کراچی میں فرانسیسی خبر ایجنسی کو انٹرویودیتے ہوئے ریٹائرڈ جنرل مشرف نے کہا کہ افغانستان میں ہندوستان کا اثرو رسوخ پاکستان کیلئے خطرناک ہے،جو پو

کراچی۔ 18 نومبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق صدر پاکستان ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف نے کہا ہے کہ نیٹوافواج کی واپسی سے شورش زدہ افغانستان میں پاکستان اور ہندوستان بالواسطہ جنگ میں ملوث ہوسکتے ہیں۔ کراچی میں فرانسیسی خبر ایجنسی کو انٹرویودیتے ہوئے ریٹائرڈ جنرل مشرف نے کہا کہ افغانستان میں ہندوستان کا اثرو رسوخ پاکستان کیلئے خطرناک ہے،جو پورے خطے اور پاکستان کیلئے ایک اور خطرہ بنے گا۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان، پاکستان مخالف افغانستان چاہے گا۔سابق صدر نے کہا کہ اگر ہندوستان، افغانستان میں نسلی گروہوں کے بعض عناصر کو استعمال کرے گا تو پاکستان بھی ایسے گروہوں کی حمایت کرے گا اور ہمارے لئے نسلی گروہ یقیناًپختون ہوں گے، یوں اگر افغانستان میں ’پراکسی وار‘ کاآغاز ہونے والا ہے تواس سے گریز کیا جانا چاہئے۔ مشرف نے الزام عائد کیا کہ ہندوستان جنوبی افغانستان میں تربیتی کیمپوں کے ذریعہ بلوچستان میں علیحدگی پسندوں کی حمایت کر رہا ہے۔ریٹائرڈ جنرل مشرف نے اپنے افسرتربیت کیلئے پاکستان کی بجائے ہندوستان بھیجنے پر سابق افغان صدر حامد کرزئی پر تنقید کی۔انہوں نے کہا کہ ایسی چھوٹی باتوں نے اسٹریٹجک مسائل پیدا کئے۔ ریٹائرڈ جنرل مشرف نے 9/11 کے بعد امریکہ کا ساتھ دینے کے فیصلہ کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے فیصلے پر قائم ہیں۔پاکستان کی سیاسی صورتحال پر انہوں نے کہاکہ میرے ذہن میں اس بارے میں کوئی شک شبہ نہیں ہے کہ لوگ تبدیلی چاہتے ہیں اور کسی اور کو بھی یہ شبہ نہیں ہونا چاہئے کہ پاکستانی عوام تبدیلی کے خواہش مند ہیں۔

TOPPOPULARRECENT