Wednesday , January 17 2018
Home / Top Stories / افغانستان پارلیمنٹ پر طالبان کا حملہ ‘ خودکش بمبار 7حملہ آور ہلاک

افغانستان پارلیمنٹ پر طالبان کا حملہ ‘ خودکش بمبار 7حملہ آور ہلاک

کابل۔22جون ( سیاست ڈاٹ کام ) طالبان کے عسکریت پسندوں نے آج افغان پارلیمنٹ پر حملہ کردیا جس کے ساتھ ہی یہ علاقہ فائرنگ اور دھماکوں سے دہل گیا ۔ اس دوران ارکان پارلیمنٹ ‘ اپنے تحفظ و سلامتی کیلئے دوڑتے نظر آئے ۔ یہ تمام مناظر ٹیلی ویژن پر لائیو ریلے کئے گئے ۔ یہ حملہ اُس وقت ہوا جب وزیر دفاع کے کلیدی عہدہ کیلئے افغان صدر کی طرف سے نامزد ا

کابل۔22جون ( سیاست ڈاٹ کام ) طالبان کے عسکریت پسندوں نے آج افغان پارلیمنٹ پر حملہ کردیا جس کے ساتھ ہی یہ علاقہ فائرنگ اور دھماکوں سے دہل گیا ۔ اس دوران ارکان پارلیمنٹ ‘ اپنے تحفظ و سلامتی کیلئے دوڑتے نظر آئے ۔ یہ تمام مناظر ٹیلی ویژن پر لائیو ریلے کئے گئے ۔ یہ حملہ اُس وقت ہوا جب وزیر دفاع کے کلیدی عہدہ کیلئے افغان صدر کی طرف سے نامزد امیدوار کا پارلیمنٹ سے تعارف کروایا جارہا تھا ۔ یہ ڈرامائی حملہ دو گھنٹوں کے بعد اس وقت ختم ہوا جب بشمول ایک خودکش کار بمبار تمام سات حملہ آوروں کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا ۔ وسطی کابل اس اہم ترین عمارت ( پارلیمنٹ ) پر حملے کے بعد سیکیورٹی کے بارے میں نئے سوالات اٹھنے لگے ہیں جبکہ دوبارہ ابھرنے والے طالبان سے افغان فورسیس پہلی مرتبہ ناٹو کی مدد کے بغیر لڑ رہے ہیں ۔ کابل پولیس کے ترجمان عباد اللہ کریمی نے اے ایف پی سے کہا کہ ’’ پارلیمنٹ عمارت کے قریب سب سے پہلے ایک کار بم دھماکہ ہوا ‘ بعد ازاں حملہ آوروں کا ایک گروپ پارلیمنٹ کے روبرو واقع بلڈنگ میں داخل ہوگیان ۔ وزارت داخلہ کے نائب ترجمان نجیب دانش نے کہا کہ سات حملہ آور تھے ۔ دھماکہ میں 15سیویلنس زخمی ہوئے ہیں ۔ حملہ آوروں نے راکٹوں کے ذریعہ پارلیمنٹ پر گرینڈ حملہ کیا جس سے معمولی نقصان پہنچا ہے ۔ پارلیمنٹ کے رکن رضا کھوسٹک جو اس وقت چیمبر میں موجود تھے پہلے دھماکہ کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے کہا کہ ’’ سیشن جاری تھا اور ہم نامزد وزیر دفاع کا انتظار کررہے تھے ۔ اچانک ایک دھماکہ کی زوردار آواز سنائی دی گئی جس کے بعد دیگر کئی چھوٹے دھماکے ہوئے ‘‘ ۔ انہوں نے کہا کہ ’’ چند لمحوں بعد سارا ایوان دھویں سے بھر گیا اور ارکان پارلیمنٹ عمارت سے بھاگنے لگے ‘‘ ۔ طالبان نے اواخر اپریل سے ملک گیر سطح پر حملوں میں شدت پیدا کی ہے اور سرکاری و بیرونی اداروں کے عمارتوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT