Tuesday , December 11 2018

افغانستان کیخلاف ہندوستان 8 وکٹوں سے فاتح

میرپور۔ 5 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) شکھر دھون اور اجنکیا راہنے پر مشتمل اوپنرس کی جوڑی کی نصف سنچریوں اور اسپنرس پر مشتمل جوڑی رویندر جڈیجہ اور روی چندرن اشون کے شاندار مظاہروں کی بدولت ہندوستان نے ایشیا کپ 2014ء کے اپنے آخری گروپ مرحلے کے مقابلے میں افغانستان کو 106 گیندیں قبل مطلوبہ نشانہ حاصل کرتے ہوئے 8 وکٹوں کی شکست دی۔ ہندوستان نے کامی

میرپور۔ 5 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) شکھر دھون اور اجنکیا راہنے پر مشتمل اوپنرس کی جوڑی کی نصف سنچریوں اور اسپنرس پر مشتمل جوڑی رویندر جڈیجہ اور روی چندرن اشون کے شاندار مظاہروں کی بدولت ہندوستان نے ایشیا کپ 2014ء کے اپنے آخری گروپ مرحلے کے مقابلے میں افغانستان کو 106 گیندیں قبل مطلوبہ نشانہ حاصل کرتے ہوئے 8 وکٹوں کی شکست دی۔ ہندوستان نے کامیابی کیلئے 160 رنز کا نشانہ 2 وکٹوں کے نقصان پر 32.2 اوورس میں حاصل کرلیا۔ ہندوستان کیلئے دھون اور راہنے کی جوڑی نے پہلی وکٹ کیلئے 121 رنز کی پارٹنرشپ نبھاتے ہوئے کامیابی کیلئے آسان نشانے کو مزید آسان کردیا۔ پہلی وکٹ کی شکل میں آؤٹ ہونے سے قبل راہنے نے 66 گیندوں میں 5 چوکوں کی مدد سے 56 رنز بنائے۔ مجموعی اسکور میں 2 رنز کے اضافہ کے بعد 123 کے اسکور پر دھون بھی بولڈ ہوگئے۔

حریف کپتان محمد نبی کی گیند پر بولڈ ہونے سے قبل دھون نے 78 گیندوں میں 4 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 60 رنز اسکور کئے۔ نمبر 3 پر روہت شرما نے 24 گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے 18 اور نمبر 4 پر دنیش کارتک نے 27 گیندوں میں 3 چوکوں کی مدد سے 21 رنز اسکور کرتے ہوئے ٹیم کو کامیابی سے ہمکنار کیا۔ افغانستان کے لئے محمد نبی نے 10 اوورس میں 30 رنز اور میر واعظ اشرف نے 5 اوورس میں 26 رنز کے عوض فی کس ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔ قبل ازیں رویندر جڈیجہ نے 30 رنز کے عوض 4 اور اشون نے 31 رنز کے عوض 3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کرتے ہوئے افغانستان کو 159 رنز تک محدود رکھا۔ محمد سمیع نے 7.2 اوورس میں 50 رنز کے عوض 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ افغانستان کی ٹیم ایک موقع پر 111/8 کی نازک صورتحال سے پریشان تھی لیکن سمیع اللہ شنوری نے 73 گیندوں میں 6 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 50 رنز جبکہ محمد شہزاد نے 22 اور اوپنر نور علی زدران نے 31 رنز بناتے ہوئے ٹیم کے مجموعی اسکور کو 150 رنز سے آگے پہونچایا۔

TOPPOPULARRECENT