Thursday , June 21 2018
Home / سیاسیات / اقتدار کی ہوس میں بی جے پی کا قوم پرستی ایجنڈہ

اقتدار کی ہوس میں بی جے پی کا قوم پرستی ایجنڈہ

نئی دہلی ؍ جموں 12 جون (سیاست ڈاٹ کام) بائیں بازو کی پارٹیوں نے آج بی جے پی پر الزام عائد کیاکہ وہ ’’اقتدار کی ہوس‘‘ میں اپنے قوم پرستی کے ایجنڈہ سے انحراف کررہی ہے۔ پاکستان اور دولت اسلامیہ کے پرچم کشمیر میں احتجاج کے دوران سخت گیروں کی جانب سے لہرانے کی اطلاعات پر وہ ردعمل ظاہر کررہی تھیں۔ بائیں بازو کی پارٹیوں نے کہاکہ علیحدگی پ

نئی دہلی ؍ جموں 12 جون (سیاست ڈاٹ کام) بائیں بازو کی پارٹیوں نے آج بی جے پی پر الزام عائد کیاکہ وہ ’’اقتدار کی ہوس‘‘ میں اپنے قوم پرستی کے ایجنڈہ سے انحراف کررہی ہے۔ پاکستان اور دولت اسلامیہ کے پرچم کشمیر میں احتجاج کے دوران سخت گیروں کی جانب سے لہرانے کی اطلاعات پر وہ ردعمل ظاہر کررہی تھیں۔ بائیں بازو کی پارٹیوں نے کہاکہ علیحدگی پسند فورسیس کی حالیہ سرگرمیاں جو ریاست جموں و کشمیر میں جاری ہیں، انتہائی ’’خطرناک‘‘ ہیں۔ ان سے پورے ملک کو خطرہ ہے۔ جہاں تک دولت اسلامیہ اور پاکستان کے پرچم لہرانے کا سوال ہے یہ علیحدگی پسندوں کی کارستانی ہے لیکن اُن کی حوصلہ افزائی پی ڈی پی ۔ بی جے پی حکومت کے اختیار کردہ رویہ اور پالیسیوں سے ہورہی ہے۔ سی پی آئی کی قومی کونسل کے سکریٹری شمیم فیضی نے کہاکہ بی جے پی ہندوستانی قوم پرستی کی بات کرتی ہے لیکن وہ خود اقتدار کی ہوس میں جموں و کشمیر میں اِس سے انحراف کررہی ہے۔ سی پی آئی ایم کے رکن پارلیمنٹ محمد سلیم نے کہاکہ بی جے پی ۔ پی ڈی پی مخلوط حکومت ’’موقع پرست‘‘ اتحاد ہے۔ نریندر مودی حکومت کو کئی سوالات کے جواب دینے ہیں۔ ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی صدر نیشنل کانفرنس دیویندر سنگھ رانا نے کہاکہ پی ڈی پی ۔ بی جے پی حکومت کی حکمرانی کا ہنوز آغاز بھی نہیں ہوا۔ یہ ریاستی عوام کی بنیادی اقل ترین توقعات کو بھی پورا نہیں کرسکی۔ اُنھوں نے کہاکہ حکومت ہر محاذ پر ناکام ہوچکی ہے۔ عوام کے مسائل اور مصائب میں اضافہ ہوتا جارہا ہے اور انتظامیہ کو کوئی فکر نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT