Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں اور اور دلتوں پر مظالم کے خلاف بائیں بازو طلبہ تنظیم کی مہم

اقلیتوں اور اور دلتوں پر مظالم کے خلاف بائیں بازو طلبہ تنظیم کی مہم

بھارت بچاؤ اور بھارت بدلو کا نعرہ 15 جولائی سے ملک گیر تحریک کا آغاز
حیدرآباد /11 جولائی ( سیاست نیوز) ملک میں جاری بے چینی اقلیتوں اور دلتوں پر جاری مظالم کے خلاف بائیں بازو کی طلبہ تنظیم نے اپنی مورچہ کھول دیا ہے اور ملک بھر میں زعفرانی تنظیموں کی زہر افشانی دور جارحیت کے خلاف بھارت بچاؤ اور بھارت بدلو کا نعرہ بلند کیا ہے ۔ کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا ( سی پی آئی ) کی طلبہ تنظیم اے آئی ایس ایف نے 15 جولائی ملک گیر سطح پر مہم کے آغاز کا اعلان کیا ہے ۔ اس سلسلہ میں قومی صدر اے آئی ایس ایف مسٹر سید ولی اللہ قادری نے اپنے بیان میں بتایا اور کہا کہ ہندوستان کو فرقہ واردیت نفرت اور ظلم سے پاک کرنے کیلئے طلبہ تنظیم کے ملک بھر کا دورہ کرے گی اور 2 کروڑ طلبہ سی بی انسانی حقوق اور مختلف سیکولر ذہن سیاسی قائدین سے ملاقات کی جائے گی اور انہیں ملک کے موجودہ حالات میں ملک کو بچانے کیلئے ضروری اقدامات پر شعور بیدار کرتے ہوئے اے آئی ایس ایف اور اے آئی وائی ایف سے جوڑا جائے گا ۔ سید ولی اللہ قادری نے کہا کہ اگر ملک کی سیکولر طاقتیں اس طرح خاموش رہتی ہیں تو پھر امن و بھائی چارہ کی مثال ۔ اس ملک کو سنگھ پریوار ہندوستان سے سنگھٹنوں میں بدل دے گا جس کیلئے ان کی کوشش جاری ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں گائے تحفظ کے نام پر مسلمانوں اور دلتوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے اور انہیں سرے عام مارپیٹ کے ذریعہ ہلاک کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آج جو کچھ ملک میں چل رہا ہے یہ ملک کی جمہوریت کے خلاف اور ملک کی سالمیت کیلئے خطرہ ہے ۔ انہوں نے مودی حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ گذشتہ تین سالوں کے عرصہ میں مودی حکومت نے جو وعدے کئے تھے اس کے برخلاف ہی اقدامات کر رہی ہے اور نوجوانوں کو روزگار تعلیم اور صحت کو مفت فراہم کرنے کا وعدہ کیا تاہم جب سے مودی ،حکومت پر قابض ہوئے ہیں عوام کو سوائے مشکلات کے کوئی راحت فراہم نہیں ہوئی اور نہ ہی عوام کی ترقی ممکن ہو پارہی ہے ۔ انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومت کی ناکامی کو چپھانے اور ان کی عوام سے توجہ ہٹانے کیلئے حکومت جانبدارانہ پالیسی اور رویہ اپنائے ہوئے ہے ۔ عوام کو گمراہ کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ امن اور ترقی کے نعرہ کو بھول کر ملک میں زہریلے ماحول کو ہوا دی جارہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ اے آئی ایس ایف نے اپنے اس تاریخی مہم میں ان افراد کو بھی شامل کر رہا ہے جو موجودہ حالات میں زعفرانی ذہنیت اور سرکاری لاپرواہی کے سب سے زیادہ متاثر ہیں ۔ سید ولی اللہ قادری نے بتایا کہ جے این یو طالب علم نجیب کی والدہ فاطمہ نجیب حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے ریسرچ اسکالر روہیت ویمولا کی والدہ رادھیکا ویمولا جے این یو قائد کنیا کمار حالیہ شہید حافظ جنید کی والدہ کے علاوہ دیگر اس مہم میں شامل رہیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ ان تمام مسائل کے علاوہ ملک کے انتخابی نظام میں بھی اصلاحات پر زور دیا جارہا ہے ۔ بائیں بازو کی اس طلبہ تنظیم کا مطالبہ ہے کہ ملک میں انتخابات امیدوار کے نام پر نہیں بلکہ پارٹی کے نام پر ہونے چاہئے جیسا کہ مغربی ممالک میں ہوا کرتے ہیں ۔ انتخابی بدعنوانیوں کو روکنے کیلئے تمام سیکولر جماعتوں کو ایک جٹ ہونا چاہئے ۔ انہو ںنے کہا کہ تاریخی مہم کا آغاز کنیا کماری سے ہوگا اور یہ یاترا پورے ملک کا دورہ کرے گی ۔

TOPPOPULARRECENT