Tuesday , January 16 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے ٹی آر ایس حکومت وقف

اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے ٹی آر ایس حکومت وقف

حیدرآباد۔ 3۔ڈسمبر (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے کہا کہ چندر شیکھر راؤ کی زیر قیادت ٹی آر ایس حکومت اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے خود کو وقف کرچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی اور ترقی کیلئے حکومت نے کئی منفرد اسکیمات کا آغاز کیا ہے۔ جناب محمود علی نے آج تلنگانہ بھون میں ٹی آر ای

حیدرآباد۔ 3۔ڈسمبر (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے کہا کہ چندر شیکھر راؤ کی زیر قیادت ٹی آر ایس حکومت اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے خود کو وقف کرچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی اور ترقی کیلئے حکومت نے کئی منفرد اسکیمات کا آغاز کیا ہے۔ جناب محمود علی نے آج تلنگانہ بھون میں ٹی آر ایس اقلیتی سیل رنگا ریڈی کی جانب سے منعقد کئے گئے بلڈ ڈونیشن کیمپ کا افتتاح کیا۔ تلنگانہ کے حصول کے لئے کے سی آر کی جانب سے 2009 ء میں کی گئی بھوک ہڑتال کی یاد میں اقلیتی سیل نے مختلف پروگرام منعقد کئے ۔ اس سلسلہ کی کڑی کے طور پر آج بلڈ ڈونیشن کیمپ منعقد کیا گیا

جس میں تقریباً 103 پارٹی قائدین اور کارکنوں نے خون کا عطیہ دیا ۔ جناب محمود علی نے کیمپ کا افتتاح کرنے کے بعد مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے اقلیتوں کی بھلائی کیلئے جو بجٹ مقرر کیا ہے ، وہ دیگر ریاستوں کے مقابلہ میں سب سے زیادہ ہے۔ چندر شیکھر راؤ کو اقلیتوں کے حقیقی ہمدرد قرار دیتے ہوئے جناب محمود علی نے کہا کہ اقلیتوں سے جو انتخابی وعدے کئے گئے تھے، ان پر مکمل طور پر عمل کیا جائے گا۔ چندر شیکھر راؤ نورانی تلنگانہ کی تشکیل کے حق میں ہیں اور اس سلسلہ میں اقدامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست میں تمام طبقات کیلئے یکساں طور پر ترقی کے مواقع حاصل ہوں گے ۔ انہوں نے 2009 ء میں چندر شیکھر راؤ کے مرن برت کی یاد تازہ کی اور کہا کہ مرکزی حکومت کو کے سی آر کے مرن برت کے بعد تلنگانہ تشکیل کیلئے مجبور ہونا پڑا۔ انہوں نے کہا کہ کے سی آر نے علحدہ ریاست کے حصول کیلئے اپنی جان داؤ پر لگادی تھی۔ محمود علی نے کہا کہ کے سی آر کے مرن برت کے 11 دن کی تکمیل کے موقع پر 9 ڈسمبر کو تمام مذاہب کی جانب سے دعاؤں کا اہتمام کیا جائے گا۔ مساجد ، چرچس اور گرجا گھروں میں کے سی آر کی درازی عمر اور تلنگانہ کی ترقی کیلئے دعاؤں کا اہتمام کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ درگاہ حضرات یوسفینؒ نامپلی اور دیگر درگاہوں میں خصوصی دعاؤں کا اہتمام کیا جارہا ہے۔

ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ تلنگانہ کے حصول میں اقلیتوں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور ریاست کی ترقی میں وہ اپنی حصہ داری ادا کرنے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان تلنگانہ کی ترقی کیلئے کسی بھی قربانی کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے حکومت کے 6 ماہ کی تکمیل کو تلنگانہ کا سنہرا دور قرار دیا اور کہا کہ 6 ماہ کے عرصہ میں ٹی آر ایس حکومت نے اقلیتوں کی ترقی کے عملی اقدامات کئے ہیں۔ حکومت نے جو بجٹ مختص کیا ہے ، اسے مکمل خرچ کیا جائے گا اور ضرورت پڑنے پر مزید بجٹ جاری کیا جائے گا۔ انہوں نے اقلیتوں سے اپیل کی کہ وہ شادی مبارک اور دیگر فلاحی اسکیمات سے استفادہ کریں۔ انہوں نے اقلیتی سیل ضلع رنگا ریڈی کی جانب سے 10 روزہ پروگرام کے انعقاد کی ستائش کی ۔ 29 نومبر سے ان پروگراموں کا آغاز ہوا تھا۔ اس پروگرام میں رکن قانون ساز کونسل راملو نائک کے علاوہ صدر اقلیتی سیل رنگا ریڈی عبدالمقیت چندا، ایم اے وحید ایڈوکیٹ ، محمد رفیع (قطب اللہ پور) ، نائب صدر اقلیتی سیل سید غوث علی ، عبید علی ، محمد نصیرالدین جنرل سکریٹری ، محمد یسین ایوبی ایڈوکیٹ، محمد انور کوآپشن ممبر، محمد عبدالنعیم (شیر لنگم پلی) اور دوسروں نے شرکت کی ۔ خواتین کی کثیر تعداد نے بھی خون کا عطیہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT