Tuesday , June 19 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی کے لیے اسکیمات پر عمل کو یقینی بنانے کی کوشش

اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی کے لیے اسکیمات پر عمل کو یقینی بنانے کی کوشش

اعداد و شمار اور اسکیمات کی تفصیلات تیار رکھنے محکموں کو ہدایت ، چیف منسٹر کی خصوصی دلچسپی

اعداد و شمار اور اسکیمات کی تفصیلات تیار رکھنے محکموں کو ہدایت ، چیف منسٹر کی خصوصی دلچسپی

حیدرآباد۔/5جون، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ایس ایس، ایس ٹی، بی سی اور اقلیتوں کی بہبود سے متعلق اسکیمات کے سلسلہ میں جائزہ اجلاس طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ انہوں نے متعلقہ محکمہ جات کو تمام اعداد و شمار اور اسکیمات کی تفصیلات کے ساتھ تیار رہنے کی ہدایت دی ہے۔ چیف منسٹر نے ایس سی، ایس ٹی، بی سی اور اقلیتی بہبود سے متعلق تمام قلمدان اپنے پاس رکھے ہیں تاکہ کمزور طبقات کی بھلائی سے متعلق ٹی آر ایس کے انتخابی وعدوں پر عمل آوری میں سہولت ہو۔ چیف منسٹر نے ان تمام طبقات کی بھلائی سے متعلق تمام اُمور کی ذمہ داری سینئر آئی اے ایس عہدیدار ڈاکٹر ٹی رادھا کے سپرد کی ہے تاکہ جائزہ اجلاس کے انعقاد میں سہولت ہو۔ ڈاکٹر ٹی رادھا ایس سی، ایس ٹی، بی سی اور اقلیت کی بھلائی سے متعلق محکمہ جات کے انچارج پرنسپل سکریٹری ہیں۔ چیف منسٹر کے دفتر سے ہدایت ملنے کے بعد ڈاکٹر ٹی رادھا نے آج ایس سی، ایس ٹی، بی سی اور اقلیتی محکمہ جات سے کارکردگی رپورٹ طلب کی ہے۔ کمشنر اقلیتی بہبود شیخ محمد اقبال ( آئی پی ایس) سے بات چیت کرتے ہوئے پرنسپل سکریٹری نے اقلیتی اداروں کی کارکردگی اور اسکیمات کے بارے میں تفصیلات روانہ کرنے کی خواہش کی۔ کمشنر اقلیتی بہبود نے اقلیتی فینانس کارپوریشن، حج کمیٹی، اردو اکیڈیمی، وقف بورڈ، کرسچین فینانس کارپوریشن، دائرۃ المعارف اور دیگر اداروں کی کارکردگی سے متعلق تفصیلی رپورٹ اور پاور پوائنٹ پریزنٹیشن تیار کرتے ہوئے روانہ کردیا۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر بہت جلد بہبود سے متعلق تمام اداروں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کا فیصلہ کرچکے ہیں۔ چندر شیکھر راؤ نے اعلان کیا کہ آئندہ پانچ برسوں میں کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے ایک لاکھ کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ تمام اداروں کی تلنگانہ میں کارکردگی، اسکیمات اور بجٹ کے بارے میں تفصیلات انچارج پرنسپل سکریٹری ٹی رادھا نے تیار کرلی ہے۔چیف منسٹر کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ اقلیتوں اور کمزور طبقات کی بھلائی سے متعلق اسکیمات پر موثر عمل آوری کو یقینی بنانے کیلئے چیف منسٹر نے تمام فلاحی اداروں کے قلمدان اپنے ذمہ رکھے ہیں۔ جائزہ اجلاس میں گذشتہ پانچ برسوں کے دوران تلنگانہ میں مختلف فلاحی اسکیمات پر کئے گئے خرچ اور استفادہ کنندگان کی تفصیلات کا جائزہ لیا جائے گا۔ چندر شیکھر راؤ فلاحی اسکیمات پر عمل آوری میں کسی بھی قسم کی خامیوں یا بے قاعدگیوں کے خلاف سخت کارروائی کے حق میں ہیں۔ وہ چاہتے ہیں کہ فلاحی اسکیمات پر عمل آوری میں مکمل شفافیت رہے اور اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہونچیں۔

TOPPOPULARRECENT