Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں کیلئے تلنگانہ حکومت کے نئے اسکیمات کی تجویز

اقلیتوں کیلئے تلنگانہ حکومت کے نئے اسکیمات کی تجویز

کل وزیر فینانس ایٹالہ راجندر کا محکمہ اقلیتی بہبود کے ساتھ اجلاس

کل وزیر فینانس ایٹالہ راجندر کا محکمہ اقلیتی بہبود کے ساتھ اجلاس
حیدرآباد۔/14اگسٹ، ( سیاست نیوز) وزیر فینانس تلنگانہ ای راجندر نے اقلیتی بہبود کے بجٹ کی تیاری کے سلسلہ میں 16اگسٹ کو محکمہ اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس طلب کیا ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود احمد ندیم کے علاوہ اقلیتی اداروں کے اعلیٰ عہدیداروں کو بجٹ تجاویز کے ساتھ شرکت کی ہدایت دی گئی ہے جن میں اقلیتی فینانس کارپوریشن، حج کمیٹی، وقف بورڈ، اردو اکیڈیمی، سی ای ڈی ایم، دائرۃ المعارف، سروے کمشنر وقف اور اقلیتی کمشنریٹ شامل ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ سکریٹری اقلیتی بہبود نے حکومت کے اعلان کے مطابق اقلیتی بہبود کیلئے 1000کروڑ کی بجٹ تجاویز کو قطعیت دے دی ہے جو وزیر فینانس کو پیش کی جائیں گی۔ محکمہ کے ذرائع نے بتایا کہ حکومت اپنے پہلے بجٹ میں اقلیتوں کیلئے بعض نئی اسکیمات کے آغاز کا منصوبہ رکھتی ہے تاکہ اسکیمات پر موثر عمل آوری کو یقینی بنایا جاسکے۔ اقلیتوں کی تعلیمی ترقی سے متعلق اسکیمات پر بجٹ کا تقریباً 60فیصد حصہ مختص کیا جائے گا جبکہ غریب اقلیتی خاندانوں کو چھوٹے کاروبار سے وابستہ کرتے ہوئے معاشی طور پر مستحکم کرنے چھوٹے قرض کی اجرائی کی اسکیم کے آغاز پر سنجیدگی سے غور کیا جارہا ہے۔ حکومت نے اقلیتوں کی بھلائی کے سلسلہ میں جو وعدے کئے تھے ان کے مطابق ٹی آر ایس حکومت کا پہلا بجٹ ہوگا۔ وزیر فینانس نے بجٹ کی تیاری کے سلسلہ میں ابھی تک مختلف اہم محکمہ جات کے عہدیداروں کے ساتھ اجلاس منعقد کرتے ہوئے متعلقہ محکمہ جات سے بجٹ تجاویز حاصل کرلی ہیں۔ برسراقتدار پارٹی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹی آر ایس حکومت کا پہلا بجٹ فلاحی اسکیمات سے پُر ہوگا اور اقلیتوں کے علاوہ دیگر کمزور طبقات کی بھلائی سے متعلق کئی اعلانات بجٹ میں شامل رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT