Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں کی تعلیمی، معاشی اور سماجی ترقی کیلئے مرکز سے تعاون کا تیقن

اقلیتوں کی تعلیمی، معاشی اور سماجی ترقی کیلئے مرکز سے تعاون کا تیقن

ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ جناب محمد محمود علی کی مرکزی وزیرمختارعباس نقوی سے ملاقات

ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ جناب محمد محمود علی کی مرکزی وزیرمختارعباس نقوی سے ملاقات
حیدرآباد 3 جنوری (سیاست نیوز) مرکزی مملکتی وزیر اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ محمد محمود علی کو یقین دلایا کہ اقلیتوں کی تعلیمی معاشی اور سماجی ترقی کیلئے مرکز ہر ممکن تعاون کرے گا ۔ انہو ںنے مرکزی حکومت کی پری میٹرک اسکالر شپ کی تمام درخواستوں کو قبول کرنے اور اوقافی جائیدادوں کی ترقی میں مرکز کے تعاون کا تیقن دیا ۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی جو چیف منسٹر کے چندر شیکھر راو کے ہمراہ کیرالہ کے دورہ پر ہیں آج کوچی میں مرکزی وزیر مختار عباس نقوی اور کیرالہ کے وزیر اقلیتی امور ایم علی سے ملاقات کی اور اقلیتوں کی بھلائی سے متعلق امور پر تبادلے خیال کیا ۔ جناب محمود علی نے تلنگانہ حکومت کی جانب سے اقلیتوں کی ترقی کے سلسلہ میں شروع کی گئی مختلف اسکیمات کا حوالہ دیا اور کہا کہ تلنگانہ میں اقلیتوں کی ترقی میں مرکزی حکومت کو اہم حصہ داری ادا کرنی چاہئے ۔ انہو ںنے کہا کہ مرکزی وزارت اقلیتی امور کو چاہئے کہ وہ تلنگانہ ریاست کیلئے زائد فنڈس الاٹ کرے۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کی پری میٹرک اسکالر شپ کے سلسلہ میں جو کوٹہ مقرر کیا گیا ہے وہ ناکافی ہے جس کے باعث تقریباً 40 فیصد طلباء مرکز کی اسکالر شپ سے محروم ہورہے ہیں۔ انہوں نے تلنگانہ کی پری میٹرک اسکالر شپ کی تمام درخواستوں کو قبول کرنے کا مشورہ دیا ۔ جناب محمود علی نے اقلیتوں کی ترقی سے متعلق وزیر اعظم کے 15 نکاتی پروگرام کے تحت اقلیتوں کو روزگار کی فراہمی کے سلسلہ میں تلنگانہ میں نئی اسکیمات شروع کرنے پر زور دیا ۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ میں اقلیتیں تعلیم ،ملازمت ،امکنہ اور دیگر شعبوں میں کافی پسماندہ ہیں۔ سرکاری ملازمتوں میں اقلیتوں کی حصہ داری انتہائی کم ہے سابقہ آندھرائی حکمرانوں نے اقلیتوں کی ترقی کو یکسر نظر انداز کردیا تھا ۔ انہو ںنے بتایا کہ اگر مرکزی حکومت مذکورہ شعبوں میں تلنگانہ سے تعاون کرے تو اقلیتوں کی ترقی کے نئے دور کا آغاز ہوگا ۔ انہوں نے بتایا کہ اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے ذریعہ حاصل ہونے والی آمدنی حکومت اقلیتوں کی بھلائی پر خرچ کرنا چاہتی ہے ۔ اس اسکیم کیلئے مرکز کو دست تعاون دراز کرنا چاہئے ۔ اگر مرکز مناسب رقم منظور کرے تو اس سے اوقافی اداروں کو ترقی دی جاسکتی ہے ۔ جناب محمود علی نے وقف بورڈ کی تقسیم کا عمل جلد مکمل کرنے کی اپیل کی تا کہ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے اقدامات کئے جاسکیں ۔ مختار عباس نقوی نے تیقن دیا کہ وہ 9 جنوری کو حیدرآباد کا دورہ کریں گے اور اقلیتی اسکیمات پر جائزہ اجلاس منعقد کرتے ہوئے مرکز کی جانب سے تعاون کے امکانات کا جائزہ لیں گے ۔ انہوں نے اقلیتوں کی ترقی کے سلسلہ میں کے سی آر حکومت کی سنجیدگی کی ستائش کی اور ڈپٹی چیف منسٹر کے عہدہ پر مسلم قائد کو نامزد کرنے کو خوش آئند قرار دیا ۔

TOPPOPULARRECENT