Wednesday , September 19 2018
Home / اضلاع کی خبریں / اقلیتوں کے جان و مال کی حفاظت میں حکومت آسام ناکام

اقلیتوں کے جان و مال کی حفاظت میں حکومت آسام ناکام

چیف منسٹر کو برطرف کردینے قاضی ارشد پاشاہ کا مطالبہ

چیف منسٹر کو برطرف کردینے قاضی ارشد پاشاہ کا مطالبہ
نظام آباد۔/9مئی، ( پریس نوٹ ) آسام میں بوڈو انتہا پسندوں کے تشدد کے واقعات میں اقلیتی طبقہ کے جانی و مالی تباہی کی شدید مذمت کرتے ہوئے قاضی سید ارشد پاشاہ سینئر قائد کانگریس و سابق وائس چیرمین میونسپل کونسل نے مرکزی حکومت پر زور دیا کہ آسام میں مسلمانوں پر قاتلانہ حملوں، اقلیتی طبقہ کے بچوں اور خواتین کو گولی مار کر ہلاک کرنے کے المناک واقعات میں قاتلوں اور فرقہ پرست غنڈہ عناصر کے خلاف سخت قدم اٹھانے میں آسام کی ترون گگوئی حکومت ناکام ہوگئی ہے۔ ایک ایسے وقت جبکہ ملک ایک نازک دور سے گذررہا ہے عام انتخابات 2014کے مرحلہ وار انعقاد کا سلسلہ ختم ہونے کو آرہا ہے تو آسام میں انتہا پسند گروپس کی ندھا دھند فائرنگ میں اقلیتی طبقہ کے مرد و خواتین اور بچے قتل کئے جارہے ہیں۔ متاثرہ علاقوں میں فوج کے فلیگ مارچ سے خوف و دہشت کے ماحول کو ختم کرنے میں کوئی مدد نہیں ملی ہے۔ اگرچیکہ مرکزی حکومت نے بحالی امن کے سلسلہ میں تمام مدد دینے کا تیقن دیا ہے لیکن فرقہ وارانہ فسادات بھڑکانے والے ابھی تک آزاد ہیں۔ یہ اطلاعات بھی ہیں کہ فسادات کرنے کے لئے عوام کو اُکسایا جارہا ہے۔ قاضی سید ارشد پاشاہ نے مرکزی حکومت اور صدر اے آئی سی سی شریمتی سونیا گاندھی سے اپیل کی کہ وہ آسام کی ترون گگوئی حکومت کو برطرف کرکے صدرراج نافذ کریں اور انتہا پسندوں کے خلاف سخت اقدامات ک

TOPPOPULARRECENT