Tuesday , January 16 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں کے مفادات کے تحفظ کیلئے انسداد فرقہ وارانہ تشدد بل پیش کرنے کا مطالبہ

اقلیتوں کے مفادات کے تحفظ کیلئے انسداد فرقہ وارانہ تشدد بل پیش کرنے کا مطالبہ

ٹی آر ایس حکومت کی باہر سے تائید ، چندر شیکھر راؤ سے اسد اویسی کی ملاقات کے بعد بیان

ٹی آر ایس حکومت کی باہر سے تائید ، چندر شیکھر راؤ سے اسد اویسی کی ملاقات کے بعد بیان

حیدرآباد۔/22مئی، ( سیاست نیوز) صدر ٹی آر ایس مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے آج صدر مجلس مسٹر اسد الدین اویسی نے دیگر مجلسی قائدین کے ہمراہ ملاقات کرتے ہوئے انھیں ایک یادداشت پیش کی جس میں پرانے شہر کیلئے خصوصی پیاکیج کے علاوہ برقی و آبرسانی بلوں کی معافی و دیگر مطالبات شامل ہیں۔ آج دن میں صدر ٹی آر ایس کی قیامگاہ پر ہوئی اس ملاقات کے دوران صدر مجلس نے ان سے خواہش کی کہ ریاست تلنگانہ کے لوگو میں حیدرآباد کے تاریخی چارمینار کو شامل کیا جائے تاکہ حقیقی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا پیغام دیا جاسکے۔ مطالبات میں اردو کو اس کے جائز مقام کے علاوہ اقلیتوں کے مفادات کے تحفظ کیلئے ریاستی سطح پر انسداد فرقہ وارانہ تشدد بل پیش کرنے کا مطالبہ بھی شامل ہے۔ بعد ازاں صدرمجلس نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ مجلس مجوزہ تلنگانہ راشٹرا سمیتی حکومت میں شامل نہیں ہوگی بلکہ باہر سے دوستانہ تعلقات برقرار رکھتے ہوئے ہر ترقیاتی کام میں تعاون کرے گی۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی جانب سے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے ساتھ نئی ریاست کی ترقی کے منصوبوں کی مکمل حمایت کی جائے گی۔اس ملاقات کے دوران مسٹر ای راجندر، مسٹر کے ٹی راما راؤ، مسٹر اکبر الدین اویسی، مسٹر امین جعفری اور دیگر ٹی آر ایس و مجلسی قائدین موجود تھے۔ بتایا جاتا ہے کہ صدر ٹی آر ایس مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے مجلس کی جانب سے پیش کی گئی یادداشت میں موجود مطالبات پر سنجیدہ غور کرنے کا تیقن دیا ہے۔ اس ملاقات کے دوران دونوں جماعتوں کے قائدین نے ریاست کے بہتر مستقبل اور ریاست میں بہتر حکمرانی کے سلسلہ میں تبادلہ خیال کیا۔مسٹر اویسی نے اس ملاقات کے دوران صدر ٹی آر ایس و چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کیا کہ حیدرآباد کیلئے علحدہ پاور پلانٹ کی تعمیر کو یقینی بنایا جائے ۔ علاوہ ازیں کرشنا اور گوداوری سے پانی حیدرآباد لانے کے منصوبوں پر عمل آوری کا آغاز کیا جائے۔

TOPPOPULARRECENT