Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اداروں پر تقررات کیلئے ٹی آر ایس قائدین سرگرم

اقلیتی اداروں پر تقررات کیلئے ٹی آر ایس قائدین سرگرم

مزید دو دن تک درخواستوں کی وصولی ، کے ٹی آر کی بیرونی دورہ سے واپسی پر قطعیت
حیدرآباد ۔ 17۔اکتوبر (سیاست نیوز) اقلیتی اداروں پر تقررات کے سلسلہ میں چیف منسٹر کے اعلان کے فوری بعد ٹی آر ایس کے قائدین کی سرگرمیاں شدت اختیار کرچکی ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر نے مختلف اداروں پر تقررات کیلئے فہرستوں کی تیاری کا کام ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کے حوالے کیا ہے جو تمام اضلاع کے قائدین اور کارکنوں سے بائیوڈاٹا حاصل کر رہے ہیں۔ مزید دو دن تک قائدین سے بائیو ڈاٹا حاصل کئے جائیں گے  جنہیں وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ سے مشاورت کے بعد چیف منسٹر سے رجوع کیا جائے گا ۔ بتایا جاتا ہے کہ تقررات کے سلسلہ میں چیف منسٹر کو کے ٹی آر کی واپسی کا انتظار ہے جو امریکہ سے آئندہ ہفتہ حیدرآباد واپس ہوں گے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کے مطابق چیف منسٹر نے انہیں فہرستوں کی تیاری کی ہدایت دی ہے اور تقررات کا کام چیف منسٹر کا ہے ، وہ عہدے کے لحاظ سے موزوں افراد کا خود انتخاب کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر ٹی آر ایس کے قیام کے بعد سے پارٹی میں سرگرم قائدین سے اچھی طرح واقف ہیں اور وہ اپنی مرضی سے عہدوں کا انتخاب کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ اضلاع میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے کمیٹیوں کے قیام کی تجویز ہے۔ 31 اضلاع کیلئے اوقافی کمیٹی تشکیل دی جائے گی جس میں ٹی آر ایس قائدین کو نمائندگی دی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کا تحفظ حکومت کی ترجیح ہے، لہذا کمیٹیوں کی جلد تشکیل کی تیاری کی جارہی ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر کی قیامگاہ اور ان کے دفتر پر عہدوں کے خواہشمندوں کا زبردست ہجوم دیکھا جارہا ہے ۔ اضلاع اور شہر سے مختلف قائدین اپنے حامیوں کے ساتھ رجوع ہورہے ہیں ۔ مختلف اضلاع سے قائدین کے حق میں نمائندگیوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ اسی دوران باوثوق ذرائع نے بتایا کہ اقلیتی کمیشن ، حج کمیٹی ، اردو اکیڈیمی اور اقلیتی فینانس کارپوریشن پر تقررات کے سلسلہ میں پہلے مرحلہ میں ناموں کو قطعیت دی جائے گی۔ ان اداروں کے صدور نشین کے عہدوں کیلئے کئی دعویدار موجود ہیں۔ تاہم ان میں صرف ایسے قائدین کو ترجیح دی جائے گی جو 2001 ء سے پارٹی سے وابستہ ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ صدرنشین کے عہدہ کیلئے اضلاع کے قائدین کے ناموں پر بھی غور کیا جائے گا۔ مختلف وزراء اور عوامی نمائندوں کے ذریعہ بھی عہدوں کیلئے پیروی کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ بعض ارکان مقننہ بھی صدرنشین کے عہدہ کے خواہشمند ہیں۔ خاص طور پر اقلیتی فینانس کارپوریشن کی صدارت کیلئے بعض ارکان قانون ساز کونسل کی جانب سے نمائندگی کی اطلاعات ملی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT