Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اداروں پر تقررات کے لیے سرگرمیوں کا آغاز

اقلیتی اداروں پر تقررات کے لیے سرگرمیوں کا آغاز

27 اپریل سے قبل نامزد عہدوں پر تقررات کا امکان
حیدرآباد۔/14 اپریل، ( سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت نے اقلیتی اداروں پر تقررات کیلئے سرگرمی کا آغاز کردیا ہے۔ حکومت 27 اپریل کو ٹی آر ایس کے یوم تاسیس سے قبل نامزد عہدوں پر تقررات کا منصوبہ رکھتی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر کے دفتر نے اقلیتی اداروں میں نامزد عہدوں کے بارے میں محکمہ اقلیتی بہبود سے تفصیلات طلب کی ہیں۔ اردو اکیڈیمی، حج کمیٹی، اقلیتی فینانس کارپوریشن اور وقف بورڈ میں موجود عہدوں کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں تاکہ تقررات میں آسانی ہو۔ واضح رہے کہ جون 2014 میں ٹی آر ایس کے برسراقتدار آنے کے بعد سے آج تک نامزد عہدوں پر تقررات نہیں کئے گئے اور قائدین کو تقررات کا بے چینی سے انتظار ہے۔ حکومت دیگر اداروں کے ساتھ اقلیتی اداروں پر بھی تقررات کا منصوبہ رکھتی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کو ذمہ داری دی گئی کہ وہ موزوں افراد کی فہرست تیار کریں اور چیف منسٹر کو پیش کریں۔ پارٹی میں ابتداء سے سرگرم قائدین کو ترجیح دی جائے گی۔ پارٹی میں نامزد عہدوں کیلئے اقلیتی قائدین میں زبردست مسابقت دیکھی جارہی ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر کے علاوہ مختلف وزراء اور عوامی نمائندوں سے عہدوں کی سفارشات کا سلسلہ جاری ہے۔ چونکہ اقلیتی اداروں میں عہدوں کی کمی ہے اور خواہشمندوں کی کثیر تعداد ہے لہذا حکومت کو تقررات میں دشواری ہوسکتی ہے۔اقلیتی فینانس کارپوریشن، اردو اکیڈیمی اور حج کمیٹی میں صدرنشین کے علاوہ ارکان کی تعداد متعلقہ ایکٹ کے اعتبار سے کافی کم ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اردو اکیڈیمی ابھی تک دونوں ریاستوں میں تقسیم نہیں کی گئی لہذا اس پر تقررات میں قانونی دشواری ہوسکتی ہے۔ وقف بورڈ کی تشکیل کے سلسلہ میں حکومت کو اعلامیہ کی اجرائی میں کوئی دشواری نہیں تاہم حکومت کی حلیف جماعت بعض مخصوص افراد کی شمولیت کے حق میں ہے جن کے معاملات عدالت میں زیر دوران ہیں۔ عدالت سے کلین چٹ ملنے کے بعد ہی انہیں بورڈ میں شامل کیا جاسکتا ہے۔ چیف منسٹر نے مارکٹ کمیٹیوں، مندر کمیٹیوں کے بعد عام کارپوریشنوں میں تقررات کا فیصلہ کیا ہے۔ توقع کی جارہی ہے کہ آئندہ دو ہفتوں میں کئی اداروں پر تقررات کا عمل مکمل کرلیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT