Wednesday , December 13 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اقلیتی اقامتی مدارس کا قیام، سنہری تلنگانہ کی طرف پیشقدمی

اقلیتی اقامتی مدارس کا قیام، سنہری تلنگانہ کی طرف پیشقدمی

عادل آباد میں بی شفیع اللہ تلنگانہ میناریٹی ریسیڈنشیل اسٹیٹ سکریٹری کا اظہار خیال

عادل آباد۔/17اگسٹ، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) تلنگانہ اقلیتی اقامتی اسکولس کے قیام کے دوران روز نامہ سیاست کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے مسٹر بی شفیع اللہ مینارٹی فینانس کارپوریشن منیجنگ ڈائرکٹر تلنگانہ میناریٹی ریسیڈنشیل اسکولس اسٹیٹ سکریٹری نے مدیر اعلیٰ ’سیاست‘ جناب زاہد علی خاں سے اظہار تشکر کیا۔ موصوف مستقر عادل آباد کے دورہ کے موقع پر بوائز اقامتی اسکول میں پرہجوم میڈیا سے مخاطب تھے۔ اس موقع پر مسٹر قاسم او ایس ڈی حیدرآباد جو ضلع عادل آباد انچارج ہیں، مسٹر محمد طاہر الدین او ایس ڈی عادل آباد، مسٹر ندیم اللہ خان اگزیکیٹو ڈائرکٹر عادل آباد بھی موجود تھے۔ مسٹر شفیع اللہ نے عادل آباد کے اقلیتی اقامتی مدارس کی کارکردگی کو اطمینان بخش بتاتے ہوئے کہا کہ جاریہ سال 71مدارس کے ذریعہ 14ہزار طلباء اور طالبات کو تعلیم سے آراستہ کیا جارہا ہے، ضلع عادل آباد کے سات مدارس کے لئے عادل آباد، نرمل، بھینسہ، کاغذ نگر، منچریال، خانہ پور میں اراضی کی نشاندہی کرلی گئی ہے جہاں اندرون تین ماہ عمارتوں کی تعمیر کے کام کا آغاز کیا جائے گا۔ پانچ تا 10ایکر اراضی پر 20کروڑ روپیوں کے صرفہ سے ایک عمارت کی تعمیر کی جائے گی۔ جدید ٹکنالوجی کے ذریعہ تعمیراتی کام کو چھ ماہ کے اندرون تکمیل کرتے ہوئے آئندہ تعلیمی سال کا آغاز جدید عمارتوں میں کرنے کا تیقن دیا۔ ضلع میدک میں بھی عمارتوں کی تعمیر کیلئے اراضی کی نشاندہی کرلی گئی ہے۔ دیگر اضلاع میں اراضی کی نشاندہی کا کام جاری ہے۔ حکومت کی جانب سے قائم کردہ اقامتی مدارس کا نظام چلانے کی غرض سے ایک سوسائٹی کا قیام بھی عمل میں لایا گیا جو تعلیمی نظام کو کارپوریٹ طرز پر چلانے کے علاوہ عمدہ تغذیہ بہترین رہائشی سہولت بھی طلباء کو فراہم کررہے ہیں۔ ایک طالب علم پر سالانہ 80ہزار تا ایک لاکھ روپئے کے مصارف حکومت برداشت کررہی ہے۔ ریاست میں اقلیتی اقامتی مدارس کے قیام کو ملک کی سطح پر ایک تاریخی کارنامہ قرار دیا جو صرف مسلم طبقہ میں تعلیمی پسماندگی کو دور کرنے کی غرض سے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کا اقدام سنہری تلنگانہ کے لئے پیش قدمی قرار دیا۔ اقامتی مدارس میں مستقل اساتذہ کے تقررات جاریہ ماہ کے اختتام تک کرنے حکومت کوشاں ہے۔ اپنا عہدہ سنبھالنے کے بعد پہلی مرتبہ عادل آباد آمد پر ریسیڈنشیل اسکول اسسٹنٹ سکریٹری مسٹر شفیع اللہ نے مقامی بوائز اور گرلز اقامتی مدارس کا تعلیمی مشاہدہ کیا۔ موصوف طلباء اور طالبات کے لئے تعلیم کے بعد کھیل کود کی ضروری اشیاء فراہم کرنے، کھیل کود کے لئے خاطر خواہ میدان بنانے، مدارس اور ہاسٹل کی کھڑکیوں کو جالی لگانے تاکہ مچھر اندر داخل نہ ہوسکیں، بستر، ڈائننگ ہال، انورٹر، باورچی خانہ، باتھ رومس کا بھی معائنہ کیا اور متعلقہ عہدیداروں کو صفائی کا نظام برقرار رکھنے پر پابند کیا۔ اس موقع پر پرنسپل مسٹر ایم جارج، نائب پرنسپل مسٹر ندیم ارشد، عبدالحسیب، جلیل احمد خان، اساتذہ و دیگر افراد بھی موجود تھے۔ مسٹر شفیع اللہ کلاس رومس میں پہنچ کر طلباء و طالبات سے تعلیم کے تعلق سے تفصیلات دریافت کی۔ بعد ازاں نرمل، خانہ پور مدارس کا معائنہ کرنے کی غرض سے روانہ ہوگئے۔

TOPPOPULARRECENT