Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طبقہ کے نوجوانوں کو تعلیم اور روزگار فراہمی کی تجویز

اقلیتی طبقہ کے نوجوانوں کو تعلیم اور روزگار فراہمی کی تجویز

جامعہ نظامیہ کامپلکس عابڈس میں کیرئیر گائیڈنس سنٹر کے قیام کا فیصلہ
حیدرآباد ۔ 4۔ اکتوبر (سیاست نیوز) اقلیتی طبقہ سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو تعلیم اور روزگار کے شعبہ میں رہنمائی کیلئے پہلی مرتبہ کیریئر گائیڈنس سنٹر کے قیام کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ سنٹر محکمہ اقلیتی بہبود اور میناریٹی اسٹڈی سرکل کے تحت قائم کیا جائے گا ۔ اور گن فاؤنڈری میں واقع جامعہ نظامیہ کے کامپلکس میں جگہ کا انتخاب کیا گیا ہے ۔ تلنگانہ میں اقلیتوں کی رہنمائی کیلئے اس طرح کے مرکز کے قیام کی طویل عرصہ سے ضرورت محسوس کی جارہی تھی۔ اس سے قبل ایک مرتبہ یہ تجویز اس وقت پیش کی گئی جب دانا کشور محکمہ اقلیتی بہبود کے سکریٹری تھے ، انہوں نے اس تجویز کو منظوری دیدی لیکن عمل آوری نہیں کی جاسکی۔ میناریٹی اسٹڈی سرکل کے ڈائرکٹر پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ بہت جلد کیریئر گائیڈنس سنٹر کا افتتاح عمل میں آئے گا۔ انہوں نے کہا کہ سنٹر کے قیام کا مقصد تعلیم یافتہ نوجوانوں کو اعلیٰ تعلیم کے حصول اور روزگار کے سلسلہ میں مناسب رہنمائی کرنا ہے۔ اکثر دیکھا جاتا ہے کہ اقلیتی نوجوان مناسب رہنمائی نہ ملنے کے سبب کورسس کے انتخاب میں غلطی کر جاتے ہیں۔ سرکاری محکمہ جات کے تقررات سے بھی اقلیتوں کو واقف کرانے کیلئے یہ سنٹر اہم رول ادا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ فوج ، بحریہ کے علاوہ بینکنگ شعبہ میں تقررات کے بارے میں عام طور پر اقلیتی نوجوان لاعلم رہتے ہیں۔ مرکزی اداروں اور ریاستی سرکاری و نیم سرکاری اداروں کے تقررات کے سلسلہ میں بھی یہ سنٹر رہنمائی کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسابقتی امتحانات میں شرکت کیلئے رہنمائی کی جائے گی۔ سنٹر میں ماہر کونسلرس کی خدمات حاصل کی جائیں گی ۔ حکومت نے اسٹڈی سرکل کیلئے 7 کروڑ روپئے کا بجٹ مختص کیا ہے اور اسی بجٹ کے تحت گائیڈنس سنٹر کے اخراجات کی پابجائی کی جائے گی ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ یہ گائیڈنس سنٹر اقلیتی طلبہ کیلئے اعلیٰ تعلیم اور روزگار کے سلسلہ میں معاون ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں اس سنٹر کے ذریعہ کوچنگ میٹریل فراہم کرنے کی کوشش کی جائے گی ۔ اقلیتی طلبہ انٹرمیڈیٹ کے ساتھ ہی عام طور پر انجنیئرنگ یا میڈیسن کی طرف راغب ہوتے ہیں۔ گریجویشن کے بعد ایم بی اے یا ایم سی اے کورسس حاصل کر رہے ہیں جبکہ انٹرمیڈیٹ اور گریجویشن کے بعد کئی ایسے کورسس موجود ہیں جن کی تکمیل کے ذریعہ روزگار کے مواقع بآسانی حاصل کئے جاسکتے ہیں۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل کی رخصت سے واپسی کے بعد اس سنٹر کا افتتاح عمل میں آئے گا۔

TOPPOPULARRECENT