Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طلباء کو سیول سرویس کے لیے 5 نامور خانگی اداروں میں کوچنگ

اقلیتی طلباء کو سیول سرویس کے لیے 5 نامور خانگی اداروں میں کوچنگ

اعلیٰ اختیاری کمیٹی نے اپنی رپورٹ پیش کردی ۔ کوچنگ مراکز کے ذمہ داروں کا آج اجلاس
حیدرآباد۔13 جولائی (سیاست نیوز) تلنگانہ میں اقلیتی طلبہ کو سیول سرویسس کے لیے 5 نامور خانگی اداروں میں کوچنگ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ تین عہدیداروں پر مشتمل اعلی اختیاری کمیٹی نے کوچنگ کے لیے خانگی اداروں کے ناموں کی سفارش کی ہے۔ سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹیز (سی ای ڈی ایم) کے ڈائرکٹر پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ جاریہ سال جن 5 اداروں میں کوچنگ کا منصوبہ ہے ان میں برین ٹری، حیدرآباد اسٹیڈی سنٹر، آر سی ریڈی، انلاگ اور لا ایکسلینس شامل ہیں۔ راہول بوجا آئی اے ایس، شاہ نواز قاسم آئی پی ایس اور ڈیوڈ جیول آئی پی ایس پر مشتمل تین رکنی کمیٹی نے آج حکومت کو اپنی رپورٹ پیش کردی جس میں دو نئے کوچنگ مراکز کے ناموں کی سفارش کی گئی۔ گزشتہ سال تین اداروں میں اقلیتی طلبہ کو سیول سرویسس کی کوچنگ فراہم کی گئی تھی۔ پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ تمام 5 کوچنگ مراکز کے ذمہ داروں کا اجلاس جمعہ کو سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل کے پاس طلب کیا گیا جس میں کوچنگ کے پیکیج اور سی ای ڈی ایم کے ساتھ معاہدے کو قطعیت دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ جاریہ ماہ کے آخری ہفتے میں باقاعدہ کوچنگ کا آغاز ہوسکتا ہے۔ اداروں سے معاہدات کی تکمیل کے بعد طلبہ کو اطلاع دی جائے گی اور وہ اپنی پسند کے ادارے میں داخلہ لے سکتے ہیں۔ تلنگانہ حکومت نے گزشتہ سال سے سیول سرویسس کوچنگ اپنے خرچ پر فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ گزشتہ سال بھی 85 طلبہ کو تین خانگی اداروں میں کوچنگ فراہم کی گئی تھی اور ان طلبہ نے پریلمس امتحان لکھا ہے اور اب مینس کی تیاریوں میں مصروف ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ جاریہ سال 329 اقلیتی امیدواروں نے اسکریننگ ٹسٹ میں حصہ لیا تھا جن میں سے ٹاپ 100 امیدواروں کا انتخاب کیا گیا۔ یہ طلبہ مذکورہ 5 اداروں میں سے اپنی پسند کے ادارے کا انتخاب کرسکتے ہیں اور کوچنگ کی مکمل فیس حکومت ادا کرے گی۔ پروفیسر ایس اے شکور نے کہا کہ سیول سرویسس میں اقلیتوں کی نمائندگی میں اضافہ کے لیے یہ منفرد اسکیم شروع کی گئی اور انہیں امید ہے کہ گزشتہ سال کے بیاچ کے حوصلہ افزاء نتائج برآمد ہوں گے۔ جاریہ سال دو نئے اداروں کی شمولیت سے بہتر نتائج کی امید کی جارہی ہے۔ حکومت کے مشیر برائے اقلیتی امور اے کے خان نے سیول سرویسس کوچنگ کے خانگی اداروں میں اہتمام کے سلسلہ میں خصوصی دلچسپی لی ہے۔

TOPPOPULARRECENT