Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طلبہ کو مسابقتی امتحانات میں حصہ لینے تربیتی کلاس

اقلیتی طلبہ کو مسابقتی امتحانات میں حصہ لینے تربیتی کلاس

سرکاری ملازمتوں کے لیے رہنمائی شہر و اضلاع میں اسٹڈی سرکلس اور کیرئیر گائیڈنس

سرکاری ملازمتوں کے لیے رہنمائی شہر و اضلاع میں اسٹڈی سرکلس اور کیرئیر گائیڈنس
حیدرآباد۔/25نومبر، ( سیاست نیوز) حکومت نے اقلیتی طلبہ کو مسابقتی امتحانات میں شرکت اور سرکاری و غیر سرکاری اداروں میں ملازمتوں کے سلسلہ میں رہنمائی کیلئے شہر اور اضلاع میں اسٹڈی سرکلس اور کریئر گائیڈنس سیل کے قیام سے اتفاق کیا ہے۔ وزیر فینانس ای راجندر نے ریاستی اسمبلی میں آج بہبودی سے متعلق مطالبات زر پر مباحث کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت اقلیتوں کی تعلیمی و معاشی ترقی کے سلسلہ میں سنجیدہ ہے اور اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے بہت جلد وقف بورڈ کو جوڈیشیل اختیارات دیئے جائیں گے۔ ارکان کی جانب سے ضمنی سوالات کا جواب دیتے ہوئے وزیر فینانس نے کہا کہ اقلیتی طلبہ کے پری میٹرک اور پوسٹ میٹرک اسکالر شپ کیلئے بہت جلد درخواستوں کی قبولیت کا آغاز ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ نئی اسکیم FASTکے شرائط کو قطعیت دینے میں تاخیر کے سبب اسکالر شپ کی درخواستوں کو قبول کرنے میں مشکلات پیش آئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کوئی اقلیتی مستحق طالب علم اسکالر شپ اور فیس باز ادائیگی سے محروم نہیں رہے گا۔ انہوں نے اقلیتی اداروں میں اسٹاف کی کمی اور اسکیمات سے استفادہ کیلئے اقلیتوں میں شعور بیداری کی کمی کا اعتراف کیا۔ وزیر فینانس نے کہا کہ حکومت اقلیتی اداروں میں اسٹاف کی کمی کو پورا کرے گی۔اس کے علاوہ اقلیتوں کو فلاحی اور بہبودی اسکیمات سے واقف کرانے کیلئے کیریئر گائیڈنس سل کا حیدرآباد میں قیام عمل میں لایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ صرف سرکاری اداروں میں ملازمت کے بجائے خانگی شعبے اور ملٹی نیشنل کمپنیوں میں روزگار کے مواقع پیدا کرنے کی سمت مساعی کی جارہی ہے۔ نیشنل اکیڈیمی آف کنسٹرکشن کو ہر ضلع میں توسیع دینے کا منصوبہ ہے تاکہ اقلیتی نوجوانوں میں مختلف پیشوں میں مہارت پیدا کی جاسکے۔ انہوں نے تیقن دیا کہ اقلیتی فینانس کارپوریشن کو حکومت کی جانب سے مارجن منی بہت جلد جاری کردی جائے گی۔ غریبوں کیلئے مکانات کی فراہمی سے متعلق اسکیم پر حیدرآباد میں عمل آوری کے طریقہ کار کا جائزہ لیا جارہا ہے چونکہ حیدرآباد میں اراضی کی کمی ہے لہذا حکومت اپارٹمنٹس کی طرز پر تعمیر کا منصوبہ رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جہاں بھی سرکاری اراضی موجود ہو وہاں اقلیتوں کیلئے اسکولس اور ہاسٹلس تعمیر کئے جائیں گے۔ انہوں نے وزیر اعظم کے 15نکاتی پروگرام پر موثر انداز میں عمل آوری کا تیقن دیا۔ وزیر فینانس نے سرکاری ملازمتوں کے امتحانات اردو زبان میں لکھنے کی اجازت کی درخواست پر ہمدردانہ غور کا تیقن دیا۔ انہوں نے کہا کہ نئے شہر کی طرز پر حیدرآباد میں جسمانی اور ذہنی طور پر معذور بچوں کی نگہداشت کیلئے خصوصی مرکز کے قیام کا تیقن دیا۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں کیلئے مختص کردہ بجٹ کے خرچ کے بارے میں اپوزیشن کو حکومت کی نیت پر شبہ کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ حکومت اپنے وعدے کے مطابق بجٹ مکمل خرچ کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 10برسوں کے دوران سابقہ حکومتوں نے اقلیتوں کے ساتھ جو ناانصافی کی ہے اس کی پابجائی ٹی آر ایس حکومت کرے گی۔ راجندر نے کہا کہ سچر کمیٹی کی رپورٹ میں اقلیتوں کی صورتحال بہتر بنانے کے سلسلہ میں جو سفارشات پیش کی گئی ہیں ٹی آر ایس حکومت ان پر عمل آوری میں سنجیدہ ہے۔ وزیر فینانس نے اقلیتوں کیلئے شروع کردہ ’ شادی مبارک ‘ اسکیم کا حوالہ دیا اور کہا کہ اس منفرد اسکیم کے ذریعہ غریب خاندانوں کو فی کس 51ہزار روپئے کی امداد فراہم کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT