Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طلبہ کو 25 فروری سے سیول سرویس امتحانات کی کوچنگ

اقلیتی طلبہ کو 25 فروری سے سیول سرویس امتحانات کی کوچنگ

100 طلبہ کے لیے کوچنگ فراہم کی جائے گی ، حکومت سے اخراجات کی ادائیگی ، ٹنڈرس کی کشادگی

100 طلبہ کے لیے کوچنگ فراہم کی جائے گی ، حکومت سے اخراجات کی ادائیگی ، ٹنڈرس کی کشادگی
حیدرآباد ۔ /12 فبروری، ( سیاست نیوز) سیول سرویسس میں اقلیتی طلبہ کی زائد نمائندگی کو یقینی بنانے کیلئے محکمہ اقلیتی بہبود نے جاریہ سال ایک نامور ادارہ کے ذریعہ طلبہ کو سیول سرویسس امتحانات کی کوچنگ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف مائناریٹیز کی جانب سے 25فبروری سے 6ماہ کی کوچنگ کا آغاز ہوگا جس میں 100اقلیتی طلبہ شریک ہوں گے۔ حکومت کی جانب سے کوچنگ کے تمام اخراجات ادا کئے جائیں گے اور امیدواروں کو فیس ادا کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔ حکومت کی جانب سے قائم کردہ کمیٹی نے آج ٹنڈرس کا جائزہ لیتے ہوئے کوچنگ کیلئے حیدرآباد اسٹڈی سرکل کا انتخاب کیا ہے۔ کوچنگ کے سلسلہ میں دو اداروں نے ٹنڈرس داخل کئے تھے جن میں حیدرآباد اسٹڈی سرکل کے ریکارڈ اور نتائج کو دیکھتے ہوئے اس کا انتخاب کیا گیا۔ ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب جلال الدین اکبر کی صدارت میں کمیٹی قائم کی گئی تھی جس کے کنوینر ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم پروفیسر ایس اے شکور تھے جبکہ کمیٹی کے ارکان میں منیجنگ ڈائرکٹر کرسچین فینانس کارپوریشن، ڈپٹی ڈائرکٹر اقلیتی بہبود اور اسسٹنٹ سکریٹری محکمہ اقلیتی بہبود شامل تھے۔ کمیٹی کی موجودگی میں ٹنڈرس کی کشادگی عمل میں آئی اور حیدرآباد اسٹڈی سرکل کا انتخاب کیا گیا۔ سی ای ڈی ایم کی جانب سے سیول سرویسس کی خانگی ادارہ سے کوچنگ کا گزشتہ سال آغاز ہوا، اور گزشتہ سال کے پہلے بیاچ میں 85طلبہ کو کوچنگ دی گئی جن میں سے 2طلباء کا ابتدائی امتحان کیلئے انتخاب عمل میں آیا۔ ان طلباء کو اب مین ایگزامنیشن کی کوچنگ دی جارہی ہے۔ کمیٹی نے جاریہ سال بھی اسی ادارہ سے 100طلبہ کو کوچنگ دلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ متحدہ ریاست میں کوچنگ کیلئے 100 طلبہ کا انتخاب کیا گیا تھا۔ اس اعتبار سے سی ای ڈی ایم نے اہلیتی امتحان کے ذریعہ 50طلباء کا انتخاب کیا تاکہ تلنگانہ کے کوٹہ کی تکمیل ہو۔ تاہم بجٹ کی موجودگی کو دیکھتے ہوئے مزید 50طلباء کو شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اہلیتی امتحان کی ویٹنگ لسٹ کی بنیاد پر مزید 50طلباء کا انتخاب کرتے ہوئے 25فبروری سے کوچنگ کا آغاز ہوگا۔ حیدرآباد اسٹڈی سرکل کو فی طالب علم 25ہزار روپئے ادا کئے جائیں گے۔ ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ 400طلبہ نے اہلیتی امتحان میں شرکت کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ سی ای ڈی ایم آندھرا پردیش ریاست میں بھی اقلیتی طلبہ کیلئے اس طرح کی کوچنگ فراہم کرنے کا منصوبہ رکھتا ہے تاہم حکومت کی منظوری کا انتظار ہے۔ گزشتہ سال اس اسکیم کیلئے حکومت نے اقلیتی فینانس کارپوریشن کی ٹریننگ ایمپلائمنٹ اسکیم سے 50لاکھ روپئے الاٹ کئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ سیول سرویسس کے ابتدائی مرحلہ میں منتخب ہونے والے طلبہ کو مین اگزامنیشن کی کوچنگ دی جائے گی۔ انہوں نے حکومت سے سفارش کی کہ کوچنگ کے سلسلہ میں طلبہ کے سرپرستوں کی آمدنی کی حد کو ایک لاکھ سالانہ سے بڑھا کر ساڑھے چار لاکھ کیا جائے۔ مرکزی حکومت کی اسکیم کے تحت آمدنی حد سالانہ ساڑھے چار لاکھ ہے۔ اسی دوران ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب جلال الدین اکبر نے بتایا کہ سیول سرویسس میں اقلیتی طلبہ کی نمائندگی کیلئے وہ مزید بہتر کوچنگ کی منصوبہ بندی کررہے ہیں جس پر آئندہ سال سے عمل آوری کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT