Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی فینانس کارپوریشن سے بینک کے بغیر سبسیڈی اسکیم کی تجویز

اقلیتی فینانس کارپوریشن سے بینک کے بغیر سبسیڈی اسکیم کی تجویز

سید اکبر حسین چیرمین کارپوریشن کا دورہ ڈسٹرکٹ میناریٹی آفس ، درخواست گذاروں سے بات چیت
حیدرآباد۔23 اکٹوبر (سیاست نیوز) صدرنشین اقلیتی فینانس کارپوریشن سید اکبر حسین نے آج اچانک اگزیکٹیو ڈائرکٹر کارپوریشن اور ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفس حیدرآباد کا دورہ کرتے ہوئے عوام سے ملاقات کی۔ انہوں نے درخواستوں کی یکسوئی کے سلسلہ میں دشواریوں کا جائزہ لیا اور عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ غیر ضروری طور پر عوام کو ہراساں نہ کریں۔ انہوں نے بتایا کہ ایگزیکٹیو ڈائرکٹر حیدرآباد کے دفتر سے 4 ہزار درخواست گزاروں میں 34 کروڑ 48 لاکھ روپئے بطور سبسیڈی جاری کیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ زیر التوا درخواستوں کی یکسوئی کے لیے عہدیداروں کو ہدایت دی گئی ہے۔ سید اکبر حسین نے درخواست گزاروں کو تیقن دیا کہ وہ ان کے مسائل کا جائزہ لیتے ہوئے جلد یکسوئی کو یقینی بنائیںگے۔ انہوں نے عہدیداروں کو پابند کیا کہ درخواستوں کی یکسوئی کے سلسلہ میں درمیانی افراد کے رول کو ختم کریں۔ اگر کسی عہدیدار کا درمیانی افراد سے ربط ثابت ہوگا تو اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ اکبر حسین سے اس موقع پر وہاں موجود افراد نے ملاقات کرتے ہوئے اپنے مسائل سے واقف کرایا۔ انہوں نے تیقن دیا کہ سبسیڈی کے علاوہ پوسٹ میٹرک اسکالرشپ اور فیس باز ادائیگی کی درخواستوں کی یکسوئی کے سلسلہ میں وہ حکومت سے نمائندگی کریں گے۔ اکبر حسین نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھررائو نے بینک سے مربوط کیے بغیر راست سبسیڈی کی اجرائی اسکیم کی تجویز پیش کی ہے۔ بہت جلد عہدیدار اس اسکیم کو قطعیت دیں گے جس سے بیروزگار اقلیتی نوجوانوں کو فائدہ ہوگا۔ خودروزگار اسکیم کے تحت حکومت اقلیتی نوجوانوں کو چھوٹے کاروبار شروع کرنے کے لیے راست سبسیڈی جاری کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتی فینانس کارپوریشن سے سبسیڈی کے سلسلہ میں دوبارہ درخواستوں کے ادخال کے پروگرام کا جلد ہی اعلان کیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT