Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی فینانس کارپوریشن کی سبسڈی قرض اسکیم میں بے قاعدگیاں

اقلیتی فینانس کارپوریشن کی سبسڈی قرض اسکیم میں بے قاعدگیاں

سیاستکے اِنکشاف پر پولیس میں رسمی شکایت، جانچ میں عدم دلچسپی
حیدرآباد۔15مارچ، ( سیاست نیوز) اقلیتی فینانس کارپوریشن کو سبسیڈی اسکیم میں بے قاعدگیوں کی جانچ سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ گزشتہ دنوں ’’ سیاست‘‘ کی جانب سے بے قاعدگی کے معاملہ کے انکشاف کے بعد پولیس میں جو شکایت درج کرائی گئی محض وہ رسمی بن کر رہ گئی ہے۔ رنگاریڈی ضلع میں داخل کی گئی ایک درخواست کے اسنادات کی بنیاد پر حیدرآباد میں سبسیڈی اور قرض کی منظوری کے اسکام کی جانچ سے کارپوریشن کو کوئی دلچسپی نظر نہیں آتی۔ ’’ سیاست‘‘ کے انکشاف کے بعد محض رسمی طور پر پولیس عابڈز میں شکایت درج کرائی گئی لیکن جانچ کیلئے پولیس عہدیداروں سے کوئی ربط قائم نہیں کیا گیا۔ اس سلسلہ میں آج جب سکریٹری اقلیتی بہبود سے میڈیا کے نمائندوں نے استفسار کیا تو کارپوریشن کے عہدیداروں کے پاس کوئی جواب نہیں تھا۔ وہ یہ تاثر دینے کی کوشش کررہے تھے کہ پولیس اپنا کام کررہی ہے۔ سکریٹری نے جب سوال کیا کہ آیا جانچ کیلئے پولیس سے مزید نمائندگی کی گئی، تو اس پر نفی میں جواب آیا۔ سکریٹری نے منیجنگ ڈائرکٹر کارپوریشن کو ہدایت دی کہ وہ عابڈز پولیس سے ربط پیدا کرتے ہوئے تحقیقات میں تیزی لانے کی خواہش کریں تاکہ حقائق منظر عام پر آسکیں۔ اس موقع پر کارپوریشن میں بازمامور ریٹائرڈ عہدیدار نے مداخلت کرتے ہوئے سکریٹری کو بتایا کہ جس امیدوار کو سبسیڈی منظور کی گئی ہے اس کے پاس تمام صحیح اسنادات ہیں۔ اس سے صاف ظاہر ہورہا تھا کہ جو اسکام کارپوریشن میں چل رہا ہے اسے کسی طرح چھپانے کی کوشش کی جارہی ہے اور اس میں کئی ماتحت عہدیدار ملوث ہوسکتے ہیں۔ مذکورہ اسکام میں جس امیدوار کو سبسیڈی منظور کی گئی اس کے منظوری مکتوب میں آدھار کارڈ اور انکم سرٹیفکیٹ کے علاوہ گھر کا پتہ اور فون نمبر بھی اُس امیدوار کا ہے جس نے رنگاریڈی میں اپنی درخواست داخل کی تھی۔ رنگاریڈی کی درخواست کے اسنادات کا حیدرآباد میں استعمال کرنا خود اسکام کا واضح ثبوت ہے جس کا ثبوت منظوری سے متعلق مکتوب ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اسکام کا پتہ چلتے ہی اندرونی طور پر ریکارڈ میں اُلٹ پھیر کردیا گیا۔ اسکام کے ثبوت کیلئے یہی کافی ہے کہ رنگاریڈی کی درخواست اور اس کے اسنادات حیدرآباد میں کس طرح استعمال کئے گئے۔ اسے ابتداء میں معمولی غلطی بتاکر ٹالنے کی کوشش کی گئی لیکن جب یہ معاملہ ایک صحافی کا نکلا تو کسی طرح پولیس میں شکایت درج کی گئی لیکن تحقیقات میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ کارپوریشن کے حکام اسے بینک کی غلطی ثابت کرنے کی کوشش کررہے ہیں جبکہ درخواست کی جانچ کارپوریشن کا کام ہے اور وہی درخواست کو منظوری کیلئے بینک روانہ کرتے ہیں۔ اسکام سے متعلق تمام دستاویزات ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو اے کے خاں کو پیش کی جارہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT