Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کے اسکام کے خلاف تلنگانہ و اے پی حکومتوں کی قانونی کارروائی

اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کے اسکام کے خلاف تلنگانہ و اے پی حکومتوں کی قانونی کارروائی

وجئے بینک کے خلاف کریمنل مقدمہ پر غور

وجئے بینک کے خلاف کریمنل مقدمہ پر غور
حیدرآباد ۔ 11 ۔ مارچ (سیاست نیوز) اقلیتی فینانس کارپوریشن کے اسکام میں ملوث 59 کروڑ کی رقم وجئے بینک سے حاصل کرنے کیلئے تلنگانہ اور آندھراپردیش کی حکومتوں نے قانونی کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ دونوں حکومتوں نے اس سلسلہ میں متعلقہ ریاستوں کے ایڈوکیٹ جنرل سے رائے طلب کی ہے۔ 2012 ء میں کارپوریشن میں اسکام منظر عام پر آیا تھا۔ ابتداء میں 55 کروڑ 47 لاکھ روپئے کے اسکام کا اندازہ کیا گیا ۔ تاہم تحقیقات کے بعد اس رقم میں اضافہ ہوا۔ سی بی سی آئی ڈی کے ذریعہ اس معاملہ کی جانچ کی جارہی ہے۔ اسکام میں ابھی تک تقریباً 19 کروڑ روپئے کی ریکوری کی گئی جبکہ مزید 59 کروڑ کی ریکوری باقی ہے، جس کے لئے وجئے بینک مبینہ طور پر ذمہ دار ہے۔ اس اسکام میں کارپوریشن کے بعض عہدیداروں کے ساتھ وجئے بینک کے عہدیدار بھی ملوث تھے، لہذا دونوں حکومتوں نے بینک سے مابقی رقم کی ریکوری کے سلسلہ میں قانونی اقدامات کا فیصلہ کیا ہے۔ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود تلنگانہ سید عمر جلیل اور اسپیشل سکریٹری آندھراپردیش شیخ محمد اقبال نے متعلقہ ریاستوں کے ایڈوکیٹ جنرل سے اس معاملہ کو رجوع کیا ہے۔ قانونی رائے حاصل ہونے کے بعد کارروائی میں پیش قدمی کی جائے گی۔ اس قدر بھاری رقم کی ریکوری کیلئے محکمہ اقلیتی بہبود کے پاس جو امکانات موجود ہیں، اس میں بینک کے خلاف کریمنل کیس درج کرنا بھی شامل ہے۔ عدالت میں ریکوری کی درخواست داخل کرنے کی صورت میں کارپوریشن کو 10 کروڑ سے زائد بینک میں ڈپازٹ کرنے ہوں گے لہذا بینک کے خلاف فوجداری کارروائی پر قانونی رائے حاصل کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ اس اسکام کے سلسلہ میں اس وقت کے مینجنگ ڈائرکٹر سمیت 3 عہدیداروں کو معطل کیا گیا تھا ۔ تاہم تینوں کی معطلی ختم ہوچکی ہے، ان میں سے دو عہدیدار اقلیتی فینانس کارپوریشن آندھراپردیش میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT