Wednesday , June 20 2018
Home / کھیل کی خبریں / الجیریا کی 32 برس بعد ورلڈ کپ میں پہلی کامیابی

الجیریا کی 32 برس بعد ورلڈ کپ میں پہلی کامیابی

کوریا کے خلاف 4-2 کی شاندار کامیابی اسلام سلیمانی، رفیق حلیش، عبدالمومن جابو اور یٰسین ابراہیمی کے گول گروپ ایچ سے ناک آؤٹ مرحلہ میں رسائی کے امکانات روشن

کوریا کے خلاف 4-2 کی شاندار کامیابی
اسلام سلیمانی، رفیق حلیش، عبدالمومن جابو اور یٰسین ابراہیمی کے گول
گروپ ایچ سے ناک آؤٹ مرحلہ میں رسائی کے امکانات روشن
پورتو الگیرہ۔ 23؍جون (سیاست ڈاٹ کام)۔ ورلڈ کپ 2014 کے گروپ ایچ کے ایک مقابلے میں الجیریا نے جنوبی کوریا کو 4-2 سے شکست دے کر ناٹ آؤٹ مرحلہ میں رسائی کیلئے اپنے امکانات کو روشن کرلیا ہے۔ الجیریا جنوبی کوریا کو شکست دے کر افریقہ کی ایسی پہلی ٹیم بن گئی جس نے ایک میچ میں 4 گول کئے ہیں۔ یہ الجیریا کی ورلڈ کپ مقابلوں میں 32 برسوں بعد پہلی فتح ہے۔ میچ کے شروع میں الجیریا کی ٹیم مضبوط نظر آئی اور ان کا بال پر کنٹرول زیادہ تھا، جیسا کہ ابتدائی ایک موقع پر جہاں مقابلہ کے آغاز پر صرف دس منٹ ہوئے تھے، لیکن ان دس منٹوں میں الجیریا کی ٹیم 3-0 کے موقف کو حاصل کرلیا تھا۔ ابتدائی شاندار مظاہرے کے باوجود ٹیم کو پہلا گول کرنے کا موقع مقابلہ کے 26 ویں منٹ میں حاصل ہوا اور اسلام سلیمانی نے اپنی ٹیم کیلئے پہلا گول بناتے ہوئے جنوبی کوریا کے خلاف ٹیم کو سبقت دلوائی۔ پہلا گول کرنے کے بعد الجیریا نے پہلے نصف مرحلہ میں مزید 2 گول کرکے میچ پر مکمل کنٹرول حاصل کرلیا۔ اسلام سلیمانی کی جانب سے الجیریا کے لئے پہلا گول بنانے کے دو منٹ بعد ہی رفیق حلیش نے ٹیم کی سبقت کو دگنی کردی۔ دس منٹ بعد عبدالمومن جابو نے مقابلہ کے 38 ویں منٹ میں ٹیم کے لئے تیسرا گول بنایا۔ پہلے ہاف کے اختتام پر الجیریا کی ٹیم نے تین گول کرلئے تھے جب کہ جنوبی کوریا ایک بھی گول کرنے میں کامیاب نہیں ہوا تھا۔ ماہرین کے مطابق پہلے ہاف میں ہی میچ کا فیصلہ ہو چکا تھا، لیکن جنوبی کوریا کے ارادے کچھ اور ہی تھے۔

دوسرے ہاف کے شروع ہوتے ہی جنوبی کوریا نے الجیریا کے گول پر حملے شروع کئے اور پہلے تین منٹوں میں پہلا گول کرکے خسارے کو 2 گول تک پہنچا دیا۔ جنوبی کوریا کے لئے پہلا گول مقابلہ کے 50 ویں منٹ میں ہیونگ مینسن نے کیا۔ ایسے موقع پر جب جنوبی کوریا کی ٹیم نے اپنے تمام ہتھیار اگلے مورچوں پر منتقل کر رکھے تھے، الجیریا نے موقع کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے چوتھا گول کردیا۔ الجیریا کے لئے چوتھا گول یٰسین ابراہیمی نے مقابلہ کے 62 ویں منٹ میں کیا اور اس موقع پر مقابلہ کا اسکور 4-1 تھا اور کوریا کی شرمناک شکست یقینی دکھائی دے رہی تھی۔ الجیریا کے چوتھے گول کے بعد جنوبی کوریا کی ٹیم نے جارحانہ کھیل جاری رکھا اور دوسرا گول کرکے الجیریا کی برتری کو پھر دو گولوں تک کم کردیا۔ جنوبی کوریا کے لئے دوسرا گول 72 ویں منٹ میں کوجاچیول نے کیا، لیکن اس کی کامیابی کے امکانات بالکل ختم ہوچکے تھے۔ جنوبی کوریا کی ٹیم مکمل جارحیت کے باوجود دو گولوں سے آگے نہ بڑھ سکی اور اس طرح الجیریا نے ورلڈ کپ مقابلوں میں 32 سال بعد اپنا میچ جیت لیا۔ جنوبی کوریا نے اپنا پہلا میچ روس کے ساتھ برابری پر ختم کیا تھا جب کہ الجیریا کو اپنے پہلے مقابلہ میں بیلجیم کے خلاف شکست برداشت کرنی پڑی ہے۔ اہم مقابلہ میں جب الجیریا کے کوچ وحید نے بلجیم کے خلاف مقابلہ میں شرکت کرنے والے 5 کھلاڑیوں کو ٹیم سے باہر کیا تو ان پر شدید تنقید ہوئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT