Monday , December 18 2017
Home / انتقال نام / الحاج قمرالاسلام کا سانحہ ارتحال

الحاج قمرالاسلام کا سانحہ ارتحال

حیدرآباد ۔ 18ستمبر ( سیاست نیوز) حیدرآباد ۔ کرناٹک علاقہ کے مسلم رہنما رکن اسمبلی گلبرگہ اور سابق وزیر الحاج قمرالاسلام کا مختصر علالت کے بعد آج انتقال ہوگیا ۔ وہ 69 سال کے تھے ‘ انہیں 11دن قبل ہاسپٹل میں شریک کیا گیا تھا جہاں آج ان کا انتقال ہوگیا ۔ الحاج قمرالاسلام کا سیاسی کریئر طویل عرصہ پر مبنی ہے اور انہوں نے حلقہ گلبرگہ ( نارتھ ) کی 6مرتبہ نمائندگی کی ہے ۔ سدارامیا کابینہ میں وہ تین سال وزیر بلدی نظم و نسق اور وقف اُمور رہے ‘ تاہم گذشتہ سال کابینی ردوبدل کے موقع پر انہیں محروم ہونا پڑا تھا ۔ جاریہ سال جولائی میں الحاج قمر الاسلام کو آل انڈیا کانگریس کمیٹی سکریٹری انچارج کیرالا مقرر کیا گیا ۔ انہوں نے بحیثیت انڈین یونین مسلم لیگ لیڈر ‘ کلبرگی سے 1970ء کے دہے میں سیاسی کریئر کا آغاز کیا اور 1978 و 1989ء میں اسمبلی انتخابات میں کامیابی حاصل کی ۔ انہوں نے بعد میں کانگریس میں شمولیت اختیار کرلی اور 1994ء میں کامیاب ہوئے ۔انہوں نے 1996ء میں مختصر عرصہ کیلئے جنتادل میں بھی شمولیت اختیار کی تھی اور اس وقت لوک سبھا میں بھی داخلہ لیا تھا ۔ اس کے بعد اسمبلی انتخابات میں مقابلہ کیلئے انہوں نے پارلیمنٹ سے استعفی دے دیا تھا اور ایس ایم کرشنا کابینہ میں وزیر امکنہ بنائے گئے ۔ کانگریس کے سینئر قائدین جیسے غلام نبی آزاد ‘ این دھرم سنگھ اور ایم ملکارجن کھرگے سے ان کے گہرے مراسم تھے ۔ الحاج قمرالاسلام نے القمر ایجوکیشنل اینڈ چیارٹیبل ٹرسٹ کی بنیاد رکھی جس کے تحت کے سی ٹی انجنیئرنگ ‘ فارمیسی اور ڈپلوما کالجس کلبرگی میں چلائے جاتے ہیں ۔ تعلیم کے شعبہ میں انہوں نے نمایاں خدمات انجام دیں۔ وہ قوم و ملت کے ایک بے باک قائد تھے اور علاقہ حیدرآباد ۔ کرناٹک کے مسلمانوں کی ترقی کیلئے نمایاں خدمات انجام دیں ۔وہ اقلیتوں کے ہمدرد تھے اور عوامی خدمات کا غیرمعمولی ریکارڈ رکھتے ہیں۔وہ مسلمانوں کے علاوہ دلتوں‘ پسماندہ طبقات اور دیگر طبقات میںبھی مقبول تھے۔ الحاج قمر الاسلام کے انتقال پر ریاستی حکومت نے ان کے اعزاز میں کل نصف یوم تعطیل کا اعلان کیا ہے ۔ کلبرگی میں تمام سرکاری دفاتر ‘ اسکولس اور کالجس کو نصف یوم تعطیل رہے گی ۔ مختلف سیاسی جماعتوں کے قائدین نے ان کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والی شخصیتوں نے بھی انتقال پر گہرے رنج کا اظہار کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT