Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / الفا کے مفرور لیڈر کی بنگلہ دیش سے ہندوستان کو حوالگی

الفا کے مفرور لیڈر کی بنگلہ دیش سے ہندوستان کو حوالگی

انوپ چٹیہ کی تحریری درخواست ہندوستان واپسی کی خواہش پر شیخ حسینہ کی کارروائی
نئی دہلی ۔ /11 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) آسام کی ممنوعہ انتہاپسند تنظیم الفا کے گزشتہ دو دہائیوں سے مفرور لیڈر انوپ چٹیہ کو بنگلہ دیش نے آج ہندوستان کے حوالہ کردیا ۔ ممبئی کے انڈور ورلڈ ڈان چھوٹا راجن کی انڈونیشیا سے حوالگی کے چند دن بعد چٹیہ کی حوالگی عمل میں آئی ہے ۔ ممنوعہ تنظیم یونائیٹیڈ لبریشن فرنٹ آف آسام (الفا) کا بانی جنرل سکریٹری 48 سالہ چٹیہ اغواء ، قتل ، بینک ڈکیتی اور جبری وصولی کی وارداتوں میں ملوث ہونے کے سبب حکام کو مطلوب تھا ۔ تخریب کار لیڈر کو جس کا اصل نام گوپال بروا ہے بنگلہ دیش نے آج ہندوستانی حکام کے حوالہ کردیا ۔ اعلیٰ ذرائع نے کہا کہ اس کی حوالگی کیلئے وزیراعظم نریندر مودی نے شخصی طور پر مداخلت کی تھی ۔ قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوول نے بھی سرگرم رول ادا کیا تھا ۔ ہندوستان اگرچہ گزشتہ 20 سال سے چٹیہ کی حوالگی کا مطالبہ کررہے تھے لیکن بنگلہ دیش کی حکومتیں حوالگی کا سمجھوتہ نہ ہونے کی وجہ بتاتے ہوئے اس کی حوالگی سے مسلسل انکار کررہی تھیں ۔ ذرائع نے کہا کہ ’’ چٹیہ نے ایک تحریری درخواست میں کہا تھا کہ وہ ہندوستان واپسی سے دلچسپی ر کھتا ہے ۔ جس کے بعد ہی وزیراعظم شیخ حسینہ نے اس کو ہندوستان حوالہ کرنے کا فیصلہ کیا ‘‘ ۔ ملک کے ایک انتہائی مطلوب مجرم چھوٹا راجن کی انڈونیشیاء سے حوالگی کے چند دن بعد ہی یہ اہم پیشرفت ہوئی ہے ۔ راجن گزشتہ 27 سال سے مفرور تھا ۔ چٹیہ کو مارچ 1991 ء میں گرفتار کیا گیا تھا لیکن اس وقت کے چیف منسٹر آسام ہتیشور باٹکلیا نے اس کو رہا کردیا تھا اور وہ ہندوستان سے بنگلہ دیش فرار ہوگیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT