Saturday , January 19 2019

القاعدہ کے مشتبہ دہشت گرد پر فرد جرم داخل

نئی دہلی 22 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) دہلی پولیس نے القاعدہ کے مشتبہ دہشت گرد ذیشان علی کے خلاف فرد جرم پیش کردی جو گزشتہ سال اگسٹ سعودی عرب سے ہندوستان کی تحویل میں دیا گیا ہے۔ اُن کے خلاف اشتعال انگیز تقریریں کرنے، ہندوستانی نوجوانوں کو بھرتی کرنے اور دہشت گرد تنظیم کا ایک اڈہ قائم کرنے کے الزامات ہیں۔ ایڈیشنل سیشن جج سدھارتھ شرما نے مقدمے کی سماعت 2 فروری کو مقرر کی ہے جب اِس بات کا فیصلہ کیا جائے گا کہ کیا پولیس کی جانب سے پیش کردہ دستاویزات کا نوٹ لیا جانا چاہئے۔ علی کا نام جن کے ساتھ دیگر 11 افراد کے نام بھی ہیں، کا انکشاف سید انظر شاہ اور دیگر 4 محمد آصف، ظفر مسعود، محمد عبدالرحمن اور عبدالسمیع کی جانب سے کیا گیا جو قبل ازیں اِس مقدمے میں گرفتار کئے جاچکے ہیں۔ دہلی پولیس کے خصوصی شعبے نے علی کو اُن کی ایک سال کی تلاش کے بعد گرفتار کیا۔ جبکہ تین ملزمین نے الزام عائد کیاکہ وہ برصغیر ہند میں القاعدہ کی شاخ کے سرگرم کارکن ہیں اور اُنھیں 2015 ء میں گرفتار کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT