Monday , January 22 2018
Home / دنیا / القاعدہ کے ملوث ہونے کی توثیق نہیں ہوئی : امریکہ

القاعدہ کے ملوث ہونے کی توثیق نہیں ہوئی : امریکہ

واشنگٹن۔12جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکی اٹارنی جنرل ایرک ہولڈر نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ اب تک اس کے بارے میں کوئی باوثوق اطلاعات نہیں ہیں کہ پیرس کے رسالہ پر حملہ کرنے والوں کا تعلق القاعدہ سے تھا ۔ یاد رہے کہ پیرس کی سڑکوں پر اس وقت ہزاروں عوام مختلف سربراہان مملکت کے ساتھ دہشت گردی کے خلاف اپنے اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے احتجاجی ریالی منظم کئے ہیں اور ایسے موقع پر ایرک ہولڈر کا بیان یقیناً اہمیت کا حامل ہے ۔ پیرس سے ABC کے ’’ دِھس ویک‘‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال کے پیش نظر اب تک ایسی کوئی مصدقہ اطلاع نہیں ہے کہ پیرس حملے کے پس پشت اگر کونسی دہشت گرد تنظیم کارفرما ہے ۔ ہمیں یہ معلوم کرنا ہے کہ آخر حملے کا ذمہ دار کون ہے تاکہ ہم مناسب جوابی کارروائی کرسکیں ۔ البتہ ہم فرانسیسی عوام کے ساتھ اظہار یگانگت کرتے ہیں ۔ دریں اثناء وائیٹ ہاؤس نے بھی اعلان کیا کہ 18فبروری کو خصوصی طور پر ’’ دنیا میںپُرتشدد دہشت گردی سے کیسے نمٹا جائے ‘‘ کے موضوع پر ایک کانفرنس منعقد کی جائے گی ۔ مسٹر ہولڈر نے کہا کہ اس کانفرنس میں ہمارے تمام حلیف ممالک شرکت کریں گے جہاں دنیا بھر میں پھیلی دہشت گردی سے نمٹنے کے طریقہ کار پر غوروخوض کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایک ساتھ کام کرتے ہوئے ایک دوسرے سے اطلاعات کا تبادلہ کریں تو ہمیں یقین ہے کہ ہم دہشت گردطاقتوں کو شکست دینے میں کامیاب ہوجائیں گے ۔ دوسری طرف فرانسیسی سفیر متعینہ امریکہ جیرارڈ روڈ نے بھی اے بی سی کے ’’ دھس ویک‘‘پروگرام کو بتایا کہ اب تک صرف اتناہی یقینی طور پر معلوم ہوا ہے کہ کھلی بلی اور کواچی برادران آپس میں دوست تھے اور کھلی بلی نے یہ بھی کہا تھا کہ انہوں نے جو کچھ کیا وہ ایک دوسرے کے تعاون سے کیا ۔ تحقیقات کے اس مرحلہ میں اس سے زیادہ کچھ کہنا درست نہیں ہوگا تاہم بدبختی کی بات یہ ہے کہ اسی نوعیت کے دیگر دہشت گرد حملوں کا ہمیں مزید سامنا کرنا ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT