الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں چھیڑ چھاڑ کی گنجائش نہیں : رجت کمار

کانگریس کے الزامات مسترد ، چیف الیکٹورل آفیسر کا میڈیا سے خطاب
حیدرآباد ۔ 12 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز) : چیف الیکٹورل آفیسر رجت کمار نے الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں چھیڑ چھاڑ کی گنجائش نہ ہونے کا دعویٰ کیا ، کئی اسمبلی حلقوں میں وی وی پیاٹس بھی گنے گئے ہیں کانگریس قائدین کے الزامات کو مسترد کردیا ۔ آج صبح راج بھون پہونچکر گورنر سے ملاقات کرنے کے بعد دوپہر میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے رجت کمار نے تلنگانہ میں آزادانہ و منصفانہ انتخابی کا عمل پرامن طریقے سے مکمل ہونے پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے اطمینان کا اظہار کیا ۔ چیف سکریٹری ، ڈی جی پی ، کے ساتھ انتخابی عملہ کو بھی مبارکباد پیش کی اور کہا کہ آج سے ریاست میں انتخابی ضابطہ عمل ختم ہوگیا ہے ۔ انہوں نے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی کے بشمول دوسرے کانگریس قائدین کی جانب سے الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں چھیڑ چھاڑ کرنے یا اس کی گنجائش ہونے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ جو بھی الزامات عائد کئے جارہے ہیں وہ بے بنیاد ہیں ۔ اس میں کوئی سچائی نہیں ہے ۔ چیف الیکٹورل آفیسر نے کہا کہ چند جماعتوں کی درخواست پر کچھ اسمبلی حلقوں میں وی وی پیاٹس کی بھی گنتی کی گئی ہے ۔ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں چھیڑ چھاڑ کی کوئی گنجائش نہیں ہے ۔ مکمل حفاظت کے ساتھ الیکٹرانک ووٹنگ مشین اسٹرانگ روم میں رکھے گئے جس کے اندر داخل ہونا ممکن نہیں ہے ۔ ریاست میں کسی بھی مقام پر ووٹوں اور وی وی پیاٹس کی گنتی میں کوئی فرق ہونے کی اطلاعات وصول نہیں ہوئی ۔ تمثیلی رائے دہی کے بعد سی آر سی بٹن دبانے پر تمثیلی رائے دہی کے دوران جو ووٹ ڈالے گئے وہ خارج ہوجاتے ۔ ریزلٹ بٹن دبانے کی وجہ سے ’ایرر ‘ تکنیکی خرابی ہونے کی شکایتیں وصول ہونے کا دعویٰ کیا تب ایجنٹس کی موجودگی میں سب کے سامنے کلوزر بٹن دباتے ہوئے 17 سی لسٹ کے تحت ووٹوں کے فرق کو محسوس کرتے ہوئے نتائج جاری کئے گئے ہیں ۔ چیف الیکٹورل آفیسر نے کہا کہ صد فیصد وی وی پیاٹس کی گنتی کرنا ممکن نہیں ہے ۔ یہ عمل بیالٹ پیپر کے مماثل ہوجائے گا ۔ رجت کمار نے تلنگانہ اسمبلی کے لیے منتخب ہونے والے امیدواروں کی تفصیلات سنٹرل الیکشن کمیشن کے عہدیدار ایس کے روڈلا اور گورنر نرسمہن کو پیش کرچکے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT