Thursday , October 18 2018
Home / شہر کی خبریں / الیکٹرانک ووٹنگ مشین مکمل قابل بھروسہ

الیکٹرانک ووٹنگ مشین مکمل قابل بھروسہ

پیپر بیالٹ نظام کا احیاء ’ پسپائی ‘ ہوگی ۔ ٹی ایس کرشنا مورتی
حیدرآباد 19 مارچ ( پی ٹی آئی ) یہ واضح کرتے ہوئے کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین بالکل قابل بھروسہ ہیں سابق چیف الیکشن کمشنر ٹی ایس کرشنا مورتی نے آج کہا کہ پیپر بیالٹ کے سابقہ طریقہ کو اختیار کرنا ایک طرح کی پسپائی ہوگی ۔ انہوں نے پی ٹی آئی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پیپر بیالٹ میں الٹ پھیر ہوسکتا ہے ۔ اس سے کاغذ ضائع ہوگا اور انتخابی نتائج کے اعلان میں تاخیر ہوگی ۔ اس کے اور بھی دوسرے نقائص ہیں۔ انہوں نے الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو قوم کا فخر قرار دیا اور کہا کہ یہ بالکل قابل بھروسہ ہیں۔ کرشنا مورتی نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ کچھ سیاسی جماعتیں پیپر بیالٹ کے طریقہ کار کو دوبارہ رائج کرنے کی وکالت کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صرف اس وجہ سے کہ کچھ سیاسی جماعتیں انتخابات میں اچھی کارکردگی نہیں دکھا رہی ہیں اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ مشین خراب ہے ۔ ان کے خیال میں ووٹنگ مشینوں کے طریقہ کار کو ختم کرنا ایک طرح کی پسپائی ہوگی ۔ ان کے خیال میں ووٹنگ مشین پوری طرح قابل بھروسہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپر بیالٹ نظام سے انتخابی نتائج کے اعلان میں ایک ہفتہ تک کا وقت لگ سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بڑے پیمانے پر کاغذ ضائع ہوگا ۔ خود بیالٹ باکس میں الٹ پھیر ہوسکتا ہے ۔ ہم جانتے ہیں کہ کچھ انتخابات میں بوگس بیالٹ پیپر بھی ووٹ ڈالنے کیلئے استعمال کیا گیا تھا ۔ جو روک تھام ووٹنگ مشینوں میں ہوسکتی ہے وہ پیپر بیالٹ نظام میں ممکن نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بیالٹ پیپرس کا طریقہ رائج کرنے سے کئی ووٹ کالعدم بھی ہوسکتے ہیں۔ کچھ ممالک نے ہمارے نظام کی ستائش کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT